پاکستان‘ افغانستان سرحدی علاقوں میں ایک ہی وقت پولیو مہم چلانے کی تجویز

پاکستان‘ افغانستان سرحدی علاقوں میں ایک ہی وقت پولیو مہم چلانے کی تجویز

 اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان نے پولیو کے مسئلے پر قابو پانے کے لئے  افغانستان کے ساتھ  سرحدی علاقوں میں ایک ہی وقت مشترکہ طور پر انسداد پولیو مہم چلانے کی تجویز دیدی ۔ پیر کو وزیراعظم  کے  انسداد پولیو سیل کی سربراہ سینیٹر عائشہ رضا فاروق نے امریکی نشریاتی ادارے سے گفتگو میں کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے سرحدی علاقوں میں آباد ہزاروں افراد ایک سے دوسرے ملک سفر کرتے رہے ہیں جس کی وجہ سے اکثر اوقات اْن کے بچے پولیو سے بچاؤ کے قطرے پینے سے محروم رہ جاتے ہیں تاہم اْنھوں نے تجویز دی کہ اگر دونوں ملک ایک ساتھ اپنے سرحدی علاقوں میں انسداد پولیو مہم شروع کریں تو اس مسئلے پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ اس سلسلے میں افغان حکام سے مشاورت کے لئے عائشہ رضا فاروق کی قیادت میں دو رکنی پاکستانی وفد نے افغانستان حکام سے بات چیت کے لیے کابل جانا تھا لیکن بعض انتظامی وجوہات کی بنا پر یہ دورہ موخر کر دیا گیا۔ عائشہ کا کہنا تھا  اس بات کو بھی یقینی بنایا جا رہا ہے کہ پاکستان سے پولیو وائرس کسی اور ملک میں منتقل نہ ہو۔