ممکنہ دہشت گردی کے پیش نظر اسلام آباد میں ٹارگٹڈ آپریشن کا فیصلہ

اسلام آباد( آن لائن) وزارت داخلہ نے شمالی وزیرستان آپریشن کے پیش نظر وفاقی دارالحکومت میں ٹارگٹڈ آپریشن کا فیصلہ کیا ہے،آپریشن وفاقی دارالحکومت میں ممکنہ دہشت گردی کے خطرات کے پیش نظر کیا جارہا ہے یہ ان مخصوص علاقو ں میں کیا جائے گا جہاں مشتبہ شرپسندوں کے بارے میں خفیہ اداروں کی رپورٹس موجود ہیں سکیورٹی صورتحال یقینی بنانے کے لئے کچی اور افغان بستیوں میں بھی آپریشن کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق اس آپریشن میں اسلام آباد پولیس کے اہلکاروں کے ساتھ رینجرز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار حصہ لیں گے۔ اس حوالے سے وفاقی پولیس کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ وزارت داخلہ کے ذرائع کے مطابق  وفاقی دارالحکومت کے چند مخصوص علاقوں سے متعلق پہلے ہی خفیہ اداروں کی رپورٹس موصول ہو چکی ہے جہاں آپریشن کیا جانا ناگزیر ہے، ماضی میں بھی ان علاقوں سے کئی دہشت گردوں کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔ ان علاقوں میں بھارہ کہو، تھانہ سہالہ، کورال، تھانہ ترنول  انڈسٹریل ایریا پولیس کے علاقے شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق ٹارگٹڈ آپریشن میں وفاقی پولیس کی بھاری نفری کے علاوہ رینجرز ، سپیشل برانچ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار شامل ہوں گے۔