ڈاکٹر فہمیدہ‘ فضل الرحمان کے دورے‘ ڈیڑھ کروڑ کے اخراجات کی منظوری

اسلام آباد (آئی این پی) قومی اسمبلی کی فنانس کمیٹی نے سیکرٹری قومی اسمبلی کرامت حسین، ڈائریکٹر جنرل انجم مغل اور سپیکر کے پرائیویٹ سیکرٹری کی مدتِ ملازمت میں توسیع ،گاڑیوں کی خریداری و مرمت کے اخراجات، قائمہ کمیٹیوں کے چیئرمینوں کیلئے مزید پرائیویٹ سیکرٹریوں کی اسامیاں پر کرنے کی منظوری دیدی جبکہ وزیر اعظم کے اعلان کے باوجود 47کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا معاملہ ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑ گیا جس پر اپوزیشن ارکان نے احتجاج کیا۔ سپیکر اورچیئرمین کشمیر کمیٹی مولانا فضل الرحمن کے ایک سال میں غیر ملکی دوروں پرمجموعی 1کروڑ58لاکھ چھ ہزار روپے کے اخراجات کی منظوری بھی دیدی گئی۔ فنانس کمیٹی کا اجلاس سپیکر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا کی زیرِ صدارت پارلیمنٹ ہاﺅس میں منعقد ہوا۔ کمیٹی نے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے چھوٹے درجے کے ملازمین کی اسامیوں کو اپ گریڈ کرنے کی منظوری دی جبکہ گریڈ 5،7اور 9میں دس سالہ مدتِ ملازمت پوری کرنے والے یو ڈی سیز اور اردو ٹائپسٹس کو بھی مراعات اور ترقی دینے کی تجویز کی اصولی منظوری دیدی گئی۔ چودہ نئی گاڑیوں کی خریداری اور غیر ملکی دوروں کے اخراجات کی بھی منظوری دی جس کے مطابق سپیکر ،پارلیمانی وفود اور کشمیر کمیٹی کے غیر ملکی دوروں پرمجموعی 1کروڑ58لاکھ چھ ہزار روپے خرچ ہوئے ۔جن میں سے صرف سپیکر اور پارلیمانی وفود کے غیر ملکی دوروں پر1کروڑ 29لاکھ 60ہزار روپے جبکہ کشمیر کمیٹی کے چیئرمین فضل الرحمن کے تین غیر ملکی دوروں پر 28لاکھ46ہزار روپے کے اخراجات آئے۔