اپنے سرمایہ کاروں کو پاکستان کے تیل و گیس شعبہ میں سرمایہ کاری کی ترغیب دینگے: امریکہ

اسلام آباد (آن لائن) امریکی سفیر رچرڈ اولسن نے کہا ہے کہ امریکہ پاکستان کے ساتھ تجارتی و سرمایہ کاری کے حوالے سے مستحکم تعلقات کا خواہاں ہے۔ یہی وجہ ہے کہ پاکستانی وفد کے امریکی توانائی کمپنیوں سے مذاکرات کرائے گئے۔ پیر کو امریکی سفارتخانے سے جاری بیان کے مطابق امریکی سفیر رچرڈ اولسن اور وفاقی وزیر برائے پٹرولیم و قدرتی وسائل شاہد خاقان عباسی کی سرکردگی میں گیس سے متعلق تجارتی وفد نے ہیوسٹن کا دورہ کیا۔ دو روزہ دورے کے دوران لگ بھگ 30  پاکستانی نجی کمپنیوں ،سرکاری ادارو ں اور تیل و گیس کے حکام نے صف اول کی امریکی توانائی کمپنیوں سے ملاقات کی اور پاکستان میں کاروباری مواقع تلاش کرنے، پاکستانی حکومت کی جانب سے پیش کردہ ترغیبات کے بارے میں آگاہ کیا اور نجی شعبہ کو پاکستان میں تیل و گیس کے شعبہ میں سرمایہ کاری کیلئے راغب کیا۔ اس تجارتی وفد میں پاکستانی وزارت پٹرولیم و قدرتی وسائل کے حکام، پاکستان کی سترہ صف اول کی تیل و گیس کمپنیوں کے سربراہ بشمول سرکاری و نجی کاروباری اداروں کے سربراہان اور امریکی محکمہ خارجہ اور محکمہ تجارت کے نمائندے شامل تھے۔ امریکی سفیر اولسن نے کہا کہ یہ تجارتی مشن اس بات کی غمازی کرتا ہے کہ امریکہ کی جانب سے پاکستان کے ساتھ تجارتی وسرمایہ کاری اور دونوں ملکوں کے درمیان زیادہ سے زیادہ مستحکم تجارتی تعلقات پرکتنا زور دیتا ہے۔ توانائی سے متعلق تجارتی وفد کے دورے کا اہتمام امریکہ اور پاکستان کے مابین واشنگٹن میں منعقد ہونے والے انرجی ورکنگ گروپ کے اجلاس کی ایک کڑی ہے۔ یہ ورکنگ گروپ وزیر خارجہ کیری اور وزیر اعظم نواز شریف کے اعلان کردہ از سرنو شروع کردہ دوطرفہ تزویراتی مذاکرات کے تحت منعقد ہونے والا پہلا اجلاس تھا۔ تجارتی وفد کا دورہ وزیر اعظم نواز شریف کے امریکہ کے  سرکاری دورے کا تسلسل ہے۔ اس دورے کے دوران وزیر اعظم نواز شریف نے اپنی حکومت کے توانائی کے شعبہ میں اصلاحات اور امریکہ اور پاکستان کے درمیان نجی شعبہ کے تعلقات میں اضافہ پر زور دیا۔