’’پاکستان‘ چین اور بھارت ایٹمی ہتھیاروں کی تعداد میں کمی نہیں کر سکتے‘‘

اسلام آباد (جاوید صدیق) پاکستان‘ چین اور بھارت کے پاس امریکہ اور روس کی طرح سرد جنگ کے دور کے ایٹمی ہتھیار نہیں‘ جنوبی ایشیا کے ان تینوں ملکوں کے پاس ایٹمی ہتھیاروں کی محدود تعداد ہے جسے وہ کم نہیں کر سکتے۔ یہ بات بھارت کی سٹرٹیجک امور کی ماہر کرشمی قاضی نے اپنے تازہ ترین تجزیہ میں لکھی ہے۔ بھارتی تجزیہ کار کے مطابق چین‘ پاکستان اور بھارت کے پاس زیادہ ہتھیار نہیں۔ چین کے پاس 200 سے 300‘ پاکستان کے پاس 120 جبکہ بھارت کے پاس 90 سے لیکر 100 تک ایٹمی ہتھیار ہیں۔ چین‘ پاکستان اور بھارت کو جس طرح کے سیکورٹی مسائل کا سامنا ہے وہ اپنے ایٹمی ہتھیاروں کے ذخیرے میں کمی نہیں کر سکتے۔ چین اپنی فوج کو جدید بنانے اور عسکری قوت میں اضافے کے ایک طویل المیعاد منصوبے پر عملدرآمد کر رہا ہے۔ چین اور بھارت کے تعلقات مستحکم ہیں لیکن وہ ایک دوسرے کو شک کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔