سابق صدر پرویز مشرف کے فرار کیس کی اسلام آباد ہائی کورٹ میں سماعت کے دوران جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے آئی جی پولیس بنیامین خان کی سرزنش کی ہے.

سابق صدر پرویز مشرف کے فرار کیس کی اسلام آباد ہائی کورٹ میں سماعت کے دوران جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے آئی جی پولیس بنیامین خان کی سرزنش کی ہے.

جسٹس شوکت عزیزصدیقی نے استفسار کیا کہ عدالت کے باہرکل ہونے والے ڈرامے کاکون ذمے دارہے، آپ سب انسپکٹر کے کندھوں پر ذمے داری ڈال کر کہاں چلے گئے تھے،،،اس پر آئی جی بنیامین نے بتایا کہ پرویز مشرف کو عدالتی حکم کے تحت گرفتار کر لیا گیا،،،جسٹس شوکت عزیز نے کہا کہ پولیس نے پرویزمشرف کو فرارکرانے میں مدد دی،،ان کی گرفتاری کے لیے کس افسرکو مقررکیا تھا،،،آئی جی اسلام آباد نے عدالت کو بتایا کہ وہ انٹرنیشنل جوڈیشل کانفرنس سے متعلق اجلاس میں شرکت کے لیے سپریم کورٹ گئے تھے،،،جب کہ ایس ایس پی سمیت دیگراعلیٰ حکام اسلام آباد ہائی کورٹ میں موجود تھے،،،جسٹس شوکت عزیز نے آئی جی کی سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ چیزوں کوکنفیوزنہ کریں، ایس ایس پی سیکیورٹی کیلئے آئے تھے،،،گرفتاری کیلئے نہیں، غفلت کے آپ ذمے دار ہیں، آپ کے خلاف حکم جاری کریں گے.