متروکہ وقف بورڈ کے چیئرمین کا ریٹائرڈ جج ہونا ضروری نہیں: سپریم کورٹ

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ نے متروکہ وقف املاک بورڈ کیس کی سماعت میں پشاور ہائی کورٹ کی جانب فیصلے کو کالعدم قرار دے دیا۔ عدالت کو بتایا گیا کہ پشاور ہائی کورٹ نے حال ہی میں اپنے ایک حکمنامے میں متعلقہ حکام کو ہدایت کی تھی کہ وہ کسی بھی ریٹائرڈ جج کو متروکہ وقف املاک بورڈ کو چیئرمین مقرر کر دیں تاہم فاضل عدالت نے پشاور ہائی کورٹ کے اس فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے کہا کہ ضروری نہیں بورڈ کا چیئرمین کوئی ریٹائرڈ جج ہی ہو۔ عدالت نے ہدایت جاری کی کہ اس حوالے سے کسی بھی موزوں شخص کو ترجیح بنیادوں پر جلد ازجلد چیئرمین متروکہ املاک وقف بورڈ تعینات کر دیا جائے۔ مقدمے کی مزید سماعت غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کر دیا گیا۔