ای او بی آئی کیس: سپریم کورٹ نے ای سی ایل میں ڈالے ناموں کی فہرست طلب کرلی

ای او بی آئی کیس: سپریم کورٹ نے ای سی ایل میں ڈالے ناموں کی فہرست طلب کرلی

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ نے ایف آئی اے کی جانب سے ای او بی آئی میگا سکینڈل میں ملوث افراد کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ڈالے گئے ناموں کی فہرست طلب کرلی اور ہدایت کی ہے کہ ایف آئی اے کسی کو خواہ مخواہ ہراساں نہ کیا جائے، محکمہ کے بورڈ آف ٹرسٹی کا معاملہ جلد حل کیا جائے جبکہ عدالت نے نجی چینل کی جانب سے غیرمشروط معافی مانگنے پر اس کے خلاف شوکاز نوٹس خارج کرتے ہوئے کیس کی سماعت یکم اکتوبر تک ملتوی کر دی۔ چیئرمین (ای او بی آئی) محمد ایوب شیخ نے عدالت کو بتایا کہ زمین کی واپسی یا پیسوں کا حصول سے متعلق فیصلہ کرنا ای او بی آئی کے بورڈ آف ٹرسٹی سے متعلق ہے جبکہ بورڈ آف ٹرسٹی اس وقت غیرفعال ہے اور بورڈ کے ممبران پر بدعنوانی سے متعلق الزامات ہیں جبکہ بورڈ آف ٹرسٹی کے ممبران کی تعیناتی اور تشکیل نو میں ساٹھ دن کا وقت لگ سکتا ہے۔ بورڈ آف ٹرسٹی کی تشکیل نو کے بعد یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ ای او بی آئی مختلف ہاﺅسنگ سوسائٹیز سے خریدی گئی زمین اپنے پاس رکھے گی یا واپس کرے گی۔ ڈی ایچ اے کے وکیل عرفان قادر نے بتایا کہ ای او بی آئی سے متعلق اپیل دائر کی ہوئی ہے اسے پہلے سنا جائے۔ ایڈن ہاﺅسنگ کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ میرے موکل میاں وامک انور کو ایف آئی اے کی جانب سے ہراساں کیا جاتا رہا، میرے موکل کے جیل میں ہونے کے باوجود گھر پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔