اختیارات کا ناجائز استعمال‘ سپریم کورٹ میں وفاقی وزیر اطلاعات کیخلاف درخواست دائر

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) وفاقی وزیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر کر دی گئی ہے جس میں سوموٹو لیتے ہوئے ان کیخلاف اختیارات کے ناجائز استعمال پر کارروائی کی استدعا کی گئی ہے ارشد محمود عباسی ایڈووکیٹ نے دائر کردہ درخواست میں وزیر اطلاعات اور طیبہ خانم بخاری کو فریق بنایا ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ وزیر اطلاعات نے طیبہ خانم کو بغیر کسی اتھارٹی کے اپنا اسسٹنٹ بنا رکھا ہے اور انہیں تین لاکھ روپے ماہانہ بھاری مشاہرہ و دیگر مراعات سرکاری خزانے سے ادا کی جا رہی ہیں حالانکہ ان کے پاس کوئی سرکاری عہدہ نہیں ہے۔ چند روز قبل وزیر اطلاعات ایوارڈ وصولی کیلئے گئیں تو طیبہ خانم کو وہاں سرکاری نمائندہ قرار دیا۔ درخواست گزار نے استدعا کی ہے کہ طیبہ خانم کے حوالے سے تحقیقات کرنے کا حکم دیا جائے اور وزیر اطلاعات سے پوچھا جائے کہ انہوں نے کس قانون یا اتھارٹی کے تحت طیبہ خانم کا تقرر کر رکھا ہے اور وہ کس حیثیت سے انہیں ترکی اور یورپ کے دورے پر لے کر گئیں۔ طیبہ خانم کو اب تک سرکاری خزانے سے ادا کردہ رقم وزیر اطلاعات اور طیبہ خانم سے وصول کی جائے۔