گندم کی خریداری کا ہدف79 لاکھ10 ہزارٹن‘244 ارب روپے خرچ ہونگے:کابینہ‘ نگران حکومت کا واحد مینڈیٹ الیکشن کرانا ہے: کھوسو

گندم کی خریداری کا ہدف79 لاکھ10 ہزارٹن‘244 ارب روپے خرچ ہونگے:کابینہ‘ نگران حکومت کا واحد مینڈیٹ الیکشن کرانا ہے: کھوسو

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) نگران وزیراعظم میر ہزار خان کھوسو نے اس امر کا اعادہ کیا ہے کہ نگران حکومت کا واحد مینڈیٹ آزادانہ، شفاف انتخابات کے انعقاد میں الیکشن کمشن سے بھرپور تعاون کرنا ہے۔ نگران حکومت غیرجانبدار ہے اور ہر قسم کے جانبدارانہ معاملات میں ملوث ہونے سے خود کو بچائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وہ تمام سیاسی جماعتوں سے رابطے کر رہے ہیں۔ الیکشن کے لئے مناسب فضا قائم کرنے کے لئے ہر قسم کے تعصبات سے بالاتر ہو کر رابطے کر رہے ہیں، یہی نگران حکومت کا مینڈیٹ ہے۔ انہوں نے یہ بات وفاقی کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ بعدازاں وفاقی وزیر اطلاعات عارف نظامی نے پریس بریفنگ میں بتایا کہ وزیراعظم نے کراچی اور خیبر پی کے میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی کے واقعات کی مذمت کی ہے۔ ان واقعات کے ذمہ داروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ انہیں قانون کے شکنجے میں لایا جائے گا۔ انہوں نے حکومت کی طرف سے تمام متاثرہ خاندانوں سے اظہار ہمدردی کیا اور زخمی افراد کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔ وزیراعظم میر ہزار خان کھوسو نے سکیورٹی اداروں کو ہدایت کی کہ وہ سکیورٹی کا نظام زیادہ م¶ثر بنائیں۔ انہوں نے صوبائی حکومت کو بھی ہدایت کی کہ وہ ہر قسم کی مشکوک حرکات و سکنات پر کڑی نظر رکھیں اور دہشت گردی کی کارروائیوں سے سختی سے نمٹنے کے لئے م¶ثر لائحہ عمل اختیار کریں۔ وفاقی کابینہ نے صوبائی حکومتوں کو ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی اور امن و امان کی صورتحال کو بہتر بنانے کے لئے تمام تر اقدامات اٹھانے پر اتفاق رائے کا اظہار کیا۔ وزیراعظم نے قوم کو یقین دہانی کرائی ہے کہ ملکی حالات کو معمول پر لانے کے لئے مخلصانہ کوششیں جاری رہیں گی۔ کابینہ نے زلزلہ اور دہشت گردی کے واقعات میں تمام شہید ہونے والے افراد کی مغفرت کے لئے فاتحہ خوانی کی۔ وفاقی وزیر برائے پانی و بجلی نے کابینہ کو ملک میں توانائی کی موجودہ صورتحال اور توانائی کے بحران سے نمٹنے کے لئے فوری اور قلیل المیعاد اقدامات سے آگاہ کیا۔ ان اقدامات میں وزارت خزانہ سے ایندھن کی خریداری کے لئے اضافی فنڈز کی فراہمی اور پاور سیکٹر میں ایسے پیداواری یونٹوں کے لئے گیس کی فراہمی بھی شامل ہے جو گیس کی کمیابی کی بنا پر بند پڑے ہیں۔ ان اقدامات سے بجلی کی بندش کے دورانیہ میں کمی واقع ہو گی۔ گرمی بڑھنے سے دریا¶ں میں پانی کے بہا¶ میں بہتری سے پن بجلی کی پیداوار بڑھے گی، صورتحال مزید بہتر ہو جائے گی۔ وفاقی کابینہ نے گندم کی فصل کی پبلک سیکٹر میں خریداری کی پالیسی کی منظوری دی۔ صوبوں سے مشاورت کی بنیاد پر 7.91 ملین ٹن گندم پاسکو اور صوبائی حکومتوں کے زیر انتظام خریدی جائے گی۔ 2012-12ءمیں گندم کی خریداری کے لئے صوبوں کے لحاظ سے یہ اہداف تجویز کئے گئے ہیں۔ پنجاب کا ہدف 4.50 ملین ٹن معاشی ضروریات 135.338 ارب روپے، سندھ کا ہدف 1.30 ملین ٹن معاشی ضروریات 39 ارب روپے، خیبر پی کے کا ہدف 0.40 ملین ٹن معاشی ضروریات 12 ارب روپے، بلوچستان کا ہدف 0.11 ملین ٹن معاشی ضروریات 2.300 ارب روپے، پاسکو کا ہدف 1.60 ملین ٹن معاشی ضروریات 55 ارب روپے، ٹوٹل ہدف 7.91 ملین ٹن معاشی ضروریات 244.638 ارب روپے۔ گندم کی خریداری پر 1244 ارب روپے خرچ ہوں گے۔ کابینہ نے صارفین کے لئے قیمتوں کے انڈکس کا جائزہ لیا اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کے رجحان پر بحث کی۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ اشیائے ضروریہ میں 28 اشیا کی قیمتوں میں تبدیلی نہیں ہوئی، 10 اشیا کی قیمتوں میں کمی دیکھی گئی۔ کابینہ نے مذکورہ چارٹ میں قیمتوں کی کمی کے رجحان پر اطمینان کا اظہار کیا۔ کابینہ نے نارکوٹکس کنٹرول ڈویژن سے متعلقہ کابینہ کے فیصلوں پر عملدرآمد کا جائزہ لیا۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ 68 فیصد فیصلوں پر عملدرآمد ہو چکا ہے اور باقی پر عملدرآمد ہو رہا ہے۔ کابینہ کو مزید بتایا گیا کہ پاکستان نے منشیات کے تدارک کے حوالے سے 29 ممالک کے ساتھ معاہدے (ایم او یو) پر دستخط کئے ہیں۔ اس میں سے صرف 9 معاہدے ایسے ہیں جن کے ضمن میں متعلقہ ممالک سے جواب آنا باقی ہیں، ان ممالک میں چین، افغانستان، سینیگال، سلطنت اومان، نیپال، برطانیہ، شمالی آئرلینڈ، موریشس، کرغزستان اور جمہوریہ سیٹلز شامل ہیں۔ وفاقی وزیر برائے انصاف و قانون نے کابینہ کو بین الاقوامی سطح پر قانونی چارہ جوئی اور ثالثی سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔ خطاب کرتے ہوئے میر ہزار خان کھوسو نے کہا کہ نگران حکومت کا یک نکاتی مینڈیٹ انتخابات کرانا ہے۔ ہماری غیرجانبداری پر کسی قسم کا سوال نہیں اٹھنا چاہئے۔ پشاور اور بلوچستان میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات قابل مذمت ہیں۔ صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ وہ کسی بھی مشکوک سرگرمی پر نظر رکھیں۔ دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے میکنزم تیار کیا جا رہا ہے۔ کھوسو نے وفاقی وزرا کو ہدایت کی کہ وہ کسی سیاسی جماعت کی مدد اور حمایت کا تاثر پیدا نہ ہونے دیں، احتیاط کا دامن نہ چھوڑیں، کسی بھی شکل میں جانبداری کا مظاہرہ نہیں ہونا چاہئے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نگران وزیر اطلاعات و نشریات عارف نظامی نے کہا کہ پرویز مشرف کے خلاف آرٹیکل 6 کی درخواست پر عدالت عظمیٰ جو بھی فیصلہ کرے گی حکومت اس پر من و عن عمل کرے گی۔ محفوظ انتخابی ماحول کیلئے صوبائی حکومتوں سے مشاورت کی جائے گی امیدواروں اور رائے دہندگان کا تحفظ ہر صورت یقینی بنایا جائیگا۔ وفاقی کابینہ نے 79 لاکھ 10 ہزار لاکھ ٹن گندم کی خریداری کا ہدف مقرر کیا ہے۔ تمام جماعتوں اور امیدواروں کو یقین دہانی کرائی ہے کہ انتخابی عمل کے حوالے سے یکساں مواقع فراہم کرنے کیلئے خصوصی اور م¶ثر اقدامات شروع کئے گئے ہیں، اس بارے میں ریاستی اداروں کو ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پرامن انتخابات کے انعقاد کیلئے مطلوبہ وسائل کو بروئے کار لایا جائے گا۔ کابینہ نے توانائی کے بحران سے نمٹنے کیلئے تمام آپشنز کو بروئے کار لانے کا فیصلہ بھی کیا۔ عارف نظامی نے کہا کہ انتخابی معاملات پر حکومت الیکشن کمشن کو ہدایت نہیں دے سکتی۔ عارف نظامی نے کہا کہ الیکشن میں سکیورٹی کو یقینی بنانے کے لئے پاک فوج کی مدد طلب کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، سیاستدانوں کی سکیورٹی کی گریڈنگ خطرات کو مدنظر رکھتے ہوئے کی جائے گی، اہم رہنماﺅں اور سیاستدانوں سے سکیورٹی نہیں پروٹوکول واپس لیا۔ سیاسی جماعتیں الیکشن کا بائیکاٹ کریں گی نہ ہی الیکشن ملتوی کئے جائیں گے، لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لئے آئل کمپنیوں کو ادائیگی کی جائیگی۔ وزیراعظم نے سکیورٹی اداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ سکیورٹی کے نظام کو زیادہ م¶ثر بنائیں اور صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی گئی کہ وہ ہر قسم کی مشکوک حرکات و سکنات پر کڑی نظر رکھیں، دہشت گردی کی کارروائیوں سے سختی سے نمٹنے کے م¶ثر لائحہ عمل اختیار کیا جائے۔ کابینہ نے صوبائی حکومتوں کو ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی، زلزلہ اور دہشت گردی کے واقعات میں تمام شہید ہونے والے افرادکےلئے فاتحہ خوانی کی۔ وزیراعظم نے اس امر کا بھی اظہار کیا کہ نگران حکومت کا واحد مینڈیٹ آزادانہ شفاف انتخابات کے انعقاد میں الیکشن کمشن سے بھرپور تعاون کرنا ہے۔ نگران حکومت غیر جانبدار ہے، ہر قسم کے جانبدارانہ معاملات میں ملوث ہونے سے اپنے آپ کو بچائے گی۔