فضل الرحمان کی حکومت سے علیحدگی کے باوجود مڈٹرم الیکشن کا امکان نہیں: منور حسن

اسلام آباد (مانیٹرنگ نیوز) امیر جماعت اسلامی سید منور حسن نے کہا ہے کہ ذوالفقار مرزا اور سراج درانی نے ایم کیو ایم کیخلاف پہلے بھی ٹی 20 کھیلا تھا پہلا میچ بھی فکس تھا اور یہ بھی فکس ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن ذہین آدمی ہیں نہ جانے پیپلز پارٹی کیساتھ کیوں چلے گئے۔ انہوں نے کہا کہ ذوالفقار مرزا کے پہلے بیان کے بعد صدر زرداری نے ان کے منہ پر تالا لگا دیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کے حکومت سے الگ ہونے کے باوجود مڈٹرم الیکشن کا کوئی امکان نہیں۔ کراچی میں بےت المکرم مسجد اختر کالونی میں جماعت اسلامی ضلع جنوبی کے ارکان و امیدواران کے ایک روزہ تربےتی اجتماع سے خطاب کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سید منور حسن نے کہا کہ حکومت کے خلاف جدو جہد کرنا اور تحریک چلانا جمہوری رواےات کا حصہ ہے۔ تحفظ ناموس رسالت کے سلسلے میں 26 دسمبرکو پورے ملک میں احتجاجی مظاہرے ہوںگے، 31 دسمبر کو پورے ملک میں شٹر ڈاو¿ن ہڑتال کی جائے گی جبکہ کراچی میں 9 جنوری کو بہت بڑے جلسہ عام کا انعقاد کیا جائے گا۔ ایم ایم اے کی بحالی کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں سید منور حسن نے کہا کہ ایم ایم اے کی بحالی کے حوالے سے ابھی کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔