وزیراعظم مجھ سے مشورہ کریں تو کہوں گا عدالت نہ جائیں : گیلانی

وزیراعظم مجھ سے مشورہ کریں تو کہوں گا عدالت نہ جائیں : گیلانی

اسلام آباد+ملتان (نوائے وقت رپورٹ+نمائندہ نوائے وقت) سابق وزیراعظم یوسف گیلانی نے کہا ہے کہ ذوالفقار بھٹو نے آئین دے کر قوم پر احسان کیا۔ پیپلزپارٹی کسی ایک علاقے کی نہیں وفاق کی پارٹی ہے، نظریہ ضرورت کے تحت حکومتیں توڑنے کا سلسلہ بند ہونا چاہئے۔ وزیراعظم صرف پارلیمنٹ کو جوابدہ ہے اور کسی کو نہیں، ملک میں پارلیمنٹ سب سے قابل احترام ادارہ ہے۔ پارلیمنٹ کی بالادستی کو چیلنج نہیں کیا جا سکتا، غیرآئینی کام کرنے کیلئے تیسری قوت آ چکی ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ وزیراعظم مجھ سے مشورہ کریں تو یہی کہوں گا کہ وہ عدالت نہ جائیں۔ ادارے حدود میں رہیں کوئی آقا بننے کی کوشش نہ کرے، ملک میں آئینی بحران پیدا ہو چکا ہے، مجھے ہٹانا غیرآئینی تھا، غیرآئینی کام کرنے والے ہی تیسری قوت ہیں اب ایڈونچر ازم ہوا تو ملک میں استحکام نہیں رہے گا۔ علاوہ ازیں ایک انٹرویو میں یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ تحریک انصاف اور جماعت اسلامی نگران عمل میں شریک ہوں گے۔ اتفاق رائے نہ ہونے پر الیکشن کمشن قانون کے تحت نگران حکومت کا سیٹ اپ بنانے کا مجاز ہو گا۔ مذاکرات کا عمل جلد ہی شروع ہو گا۔