یکم دسمبر سے پٹرول کی قیمت میں اضافہ ہو سکتا، اوگرا کی سینٹ کمیٹی کو بریفنگ

یکم دسمبر سے پٹرول کی قیمت میں اضافہ ہو سکتا، اوگرا کی سینٹ کمیٹی کو بریفنگ

اسلام آباد (اے پی پی) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے کیبنٹ کو بتایا گیا ہے کہ یکم دسمبر سے ڈیزل کی قیمت میں کمی جبکہ پیٹرول کی قیمت میں اضافہ ہو سکتاہے ، کمیٹی نے اوگرا کی بریفنگ کو نامکمل قرار دیتے ہوئے اگلے اجلاس میں سیکرٹری پٹرولیم ، سیکرٹری خزانہ کو طلب اور پاکستان میں پیٹرول پیدا کرنے والے کمپنیوں سے ہونے والے معاہدوں کی تفصیلات طلب کرلیں۔ کمیٹی نے اوگرا کو غیر قانونی قرار دیدیا۔ چیئرمین اوگرا سعید احمد نے بتایا کہ 3395 سی این جی لائسنس جاری کئے گئے ہیں ، ایل این جی ٹرمینل کےلئے 4ایل پی جی کے 124اور آئل کے 26 لائسنس جاری کیے گئے ہیں ۔ اوگرا کو 17888شکایات موصول ہوئیں جن میں سے 16537 پر کاروائی کی گئی ۔ صارفین کو گیس بلنگ میں 201.79 ملین روپے کا ریلیف دلوایا گیا۔ موجودہ قیمتوں پر حکومت ڈیزل پر 23.63 روپے اور پٹرول پر 23.94 روپے ٹیکس وصول کررہی ہے۔ کمیٹی نے بریفنگ پر بر ہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اربوں روپے نہیں بلکہ کھربوں روپیہ لوگوں کی جیبوں سے جا رہا ہے۔ ملکی پیدوار کو بھی درآمد شدہ مصنوعات کی قیمتوں پر فروخت کیا جا رہا ہے ۔ 22 اکتوبر سے قیمتیں فکس ہیں عالمی منڈی میں قیمتیں کم ہیں عوام کو ریلیف کیوں نہیں دیا جا رہا۔