آئی ایس آئی سے پیسے لینے والوں کو سیاست سے روکا جائے: عمران

اسلام آباد/ لاہور (نوائے وقت رپورٹ+ خصوصی رپورٹر) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے الیکشن کمشن سے مطالبہ کیا ہے کہ آئی ایس آئی سے مبینہ طور پر پیسے لینے والے سیاست دانوں کو سیاسی سرگرمیوں میں حصہ لینے سے روکا جائے۔ پریس کانفرنس میں انہوں نے نوازشریف سمیت تمام متعلقہ سیاست دانوں کو الزامات سے بری ہونے تک سیاست سے دور رہنے کا مشورہ دیا۔ چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ایف آئی اے نے ابھی تک اصغر خان کیس کی انکوائری شروع نہیں کی جس کی وجہ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) میں مک مکا ہے۔ جاوید ہاشمی پر 1990ءکے الیکشن میں آئی ایس آئی سے پیسے لینے کا الزام نہیں۔ جاوید ہاشمی اس الزام کو غلط ثابت کرکے انتخابات میں حصہ لیں گے۔ اب وقت آ گیا ہے کہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے۔ مسلم لیگ (ن) آئی ایس آئی سے پیسے لینے میں سرفہرست ہے۔ 2013ءکے انتخابات سے قبل اصغر خان کیس میں ملوث لوگ اپنے آپ کو کلیئر کروائیں۔ مسلم لیگ (ن) نے نگران وزیراعظم کیلئے کوئی مشاورت نہیں کی اور نہ ہی ہم نے شعیب سڈل کا نام دیا۔ انہوں نے کہاکہ کراچی کے حالات کی وجہ سے ملک تباہ ہو رہا ہے، بزنس مین بھاگ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ٹیکس اکٹھا کرنا اور کرپشن کا خاتمہ اولین ترجیح ہے، فوج غیرآئینی اقدامات سے گریز کرے۔ علاوہ ازیں قومی ٹیم کے سابق کپتان عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت کرکٹ سیریز ضرور ہونی چاہئے، اس سے دونوں ممالک کی عوام کو ایک دوسرے کے قریب آنے کا موقع ملتا ہے، مصروفیات کے باعث پی سی بی سے پاک بھارت سیریز دیکھنے جانے سے معذرت کر لی ہے، گوجرانوالہ کا واقعہ کرکٹ کی تاریخ کا انوکھا واقعہ ہے، دنیا میں کہیں ایسا نہیں ہوتا، میچ رکوا کر ہیلی کاپٹر اتارنا کہاں کی جمہوریت ہے۔