دشمن پاکستان کو ترقی یافتہ او ر خوشحال نہیں دیکھنا چاہتے، ان کے عزائم خاک میں ملا دیں گے: اسحاق ڈار

اسلام آباد (آن لائن) وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ حکو مت توانائی بحران کے خاتمے اور ملکی معاشی استحکام کیلئے واضح ایجنڈے پر کام کررہی ہے جس میں واضح کامیابیاں مل رہی ہیں اور عالمی ادارے اس کا اعتراف کررہے ہیں،توانائی بچت کیلئے ٹیکنالوجی کے فروغ پر توجہ دے رہے ہیں اور شمسی توانائی سے بجلی کا حصول عالمی معیار کے مطابق بنائیں گے، سانحہ صفورا دکھ دینے والا واقعہ ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ اس سانحہ سے دہشت گردوں کے عزائم پورے نہیں ہوں گے، ہمارے دشمن پاکستان کو ترقی یافتہ اور خوشحال نہیں دیکھنا چاہتے ہم ایسے دشمنوں کے عزائم خاک میں ملا دیں گے،پاکستان خوشحالی اور معاشی استحکام کی ترقی کا سفر جاری رکھے گا اور2050ء تک پاکستان دنیا کی18 ویں بڑی معیشت بن جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز یہاں ’’بجلی بچت اور روشن پاکستان ‘‘ کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ گزشتہ کئی برسوں سے توانائی کے شعبے کو نظر انداز کیا گیا ہے اگلے تین سالوں میں توانائی کے بحران پر ہمیشہ کے لئے قابو پالیں گے۔ ہم ریونیو بڑھانے کی کوشش کررہے ہیں، افراط زر میں کمی اور ترقیاتی فنڈز میں اضافہ کریں گے۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ دہشت گردی کے حالیہ واقعات ،معاشی صورت حال پر اثر اندازہو رہے ہیں ،گزشتہ روز کراچی میں بڑادکھ دینے والا واقعہ رونما ہوا۔ ہمارے دشمن پاکستان کو خوشحال اور ترقی یافتہ دیکھنا نہیں چاہتے اور کراچی جیسی بزدلانہ کارروائیاں کررہے ہیں ہم ان کے عزائم کو خاک میں ملا دیں گے اور پاکستان خوشحالی اور ترقی کا سفر جاری رکھے گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی کامیاب پالیسیوں کی بدولت 20 ماہ سے پاکستان سرمایہ کاروں کی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے۔ 2 سال میں حکومت نے مستحق افراد کے امدادی فنڈز میں اضافہ کیا ہے۔ وزیر خزانہ نے خطاب کے دوران ایک بار پھر دعوی کیا کہ 2050 ء تک پاکستان دنیا کی 18 ویں بڑی معیشت بن جائے گی۔