آئی ایم ایف کا دبا ئو، حکومت نے بجلی کی تین بڑی کمپنیوں کی نجکاری کا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد (آن لائن) عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے شدید دبائو پر حکومت کا بجلی کی تین بڑی کمپنیوں کی نجکاری کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ 6 ارب روپے کے گردشی قرضوں کو ختم کرنے کے لئے بجلی کمپنیوں کی نجکاری کی جائے گی۔ نجکاری سے بجلی کی قیمتوں میں مزید اضافہ کا امکان ہے۔ نجکاری کمشن ذرائع کے مطابق حکومت اور آئی ایم ایف حکام کے درمیان حالیہ ہونے والے ساتویں قسط کے جائزہ مذاکرات میں بجلی کے بحران کو ختم کرنے کے حوالے سے کافی بات چیت کی گئی جس میں سرفہرست بجلی کی کمپنیوں کی نجکاری تھی۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے اس حوالے سے پہلے مرحلے میں فیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی پھر لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی اور آخر میں (آئیسکو) اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی کی نجکاری عمل میں لائی گئی ان کمپنیوں کی نجکاری سے حکومت کو کافی رقم ملنے کی امید ہے۔ ذرائع نے کہا کہ 6 ارب روپے کے گردشی قرضوں کو ختم کرنے کے لئے توانائی کے شعبہ میں اصلاحات کی اشد ضرورت ہے۔ ملک میں آٹھ سے دس گھنٹے لوڈشیڈنگ سے ملکی معیشت پر برا اثر پڑ رہا ہے۔ واضح رہے کہ آئیسکو کی نجکاری کے خلاف ملازمین احتجاج کر رہے ہیں اس کے علاوہ لیسکو کے ملازمین میں بے چینی پائی جا رہی ہے۔