خون عطیہ کرنے کا عالمی دن منایا گیا

خون عطیہ کرنے کا عالمی دن منایا گیا

اسلام آباد (اے پی پی) خون کے عطیات دینے کا عالمی دن جمعہ کو پاکستان بھر میں منایا گیا۔ رضا کارانہ طور پر خون کے عطیات دیکر دوسروں کی جان بچانے والوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ خون کی محفوظ منتقلی سے متعلق شعور کو عام کیا جائیگا۔ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے تحت دنیا بھر میں ہر سال 14جون کو خون کے عطیات دینے کا دن اس مقصد کے لئے منایا جاتا ہے کہ لوگوں میں خون کا عطیہ دینے کا مثبت رجحان بڑھے۔ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق ہر سال دنیا میں 10کروڑ 70لاکھ لوگ خون کا عطیہ دیتے ہیں۔ عالمی ادارے نے 2020ءتک یہ ہدف مقرر کیا ہے کہ اس سال خون کے 100فیصد عطیات رضا کارانہ طور پر حاصل کئے جائیں۔عالمی سطح پر ہر سال 10کروڑ 70لاکھ جمع کردہ خون میں سے نصف زیادہ آمدنی والے ممالک میں جمع ہوتا ہے جن میں دنیا کی 15فیصد آبادی رہائش پذیر ہے۔ حکومت پاکستان کے ملک میں محفوظ خون کی منتقلی کے پروگرام کے پراجیکٹ ڈاکٹر پروفیسر حسن عباس ظہیر نے ”اے پی پی“ کو بتایا کہ ہر سال خون کے عطیات جمع کرنے کے عالمی دن کی مناسبت سے خصوصی آگہی مہم چلائی جاتی ہے جبکہ سیمینار بھی منعقد کئے جاتے ہیں جس میں مختلف ماہرین عوام کو خون کے عطیات دینے، محفوظ خون کے حصول اور اسے منتقل کرنے کی اہمیت اور خون دینے والوں کی صحت کی حفاظت کا بیان کرنے کے علاوہ ان کے جذبہ کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔
عالمی دن