اسلام آباد ہائیکورٹ: عدالت سے حقائق چھپانے پر جی پی او لاہور کے چیف پوسٹ ماسٹر کو 2 لاکھ روپے جرمانہ

اسلام آباد ہائیکورٹ: عدالت سے  حقائق چھپانے پر جی پی او لاہور کے  چیف پوسٹ ماسٹر کو 2 لاکھ روپے جرمانہ

اسلام آباد (وقائع نگار) عدالت سے حقائق چھپانے پر اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے جی پی او لاہور کے سابق چیف پوسٹ ماسٹر کو دو لاکھ روپے جرمانے کی ادائیگی کا حکم دیتے ہوئے رٹ خارج کردی۔ درخواست گزار جلال الدین حقانی نے درخواست میں موقف اختیار کیا تھا کہ جی پی او لاہور کے چیف پوسٹ ماسٹر کے عہدے پر تعیناتی کے اڑھائی ماہ بعد میں ان کا تبادلہ کردیا گیا۔ انیتا تراب کیس میں سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں سرکاری ملازمین کا کسی عہدے پر تعینات کئے جانے کے تین برس کے اندر تبادلہ نہیں کیا جاسکتا۔ جی پی او کے نمائندے فیصل تحسین نے عدالت کو بتایا کہ جلال الدین حقانی نے ایسی ہی ایک درخواست لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی تھی جسے مسترد کردیا گیا ہے۔ انہوں نے فاضل عدالت کے روبرو لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کی نقل بھی پیش کی۔