قائداعظم یونیورسٹی میں طلبہ کی ہڑتال‘ نویں روز بھی تدریسی عمل معطل رہا

اسلام آباد(نا مہ نگار)قائداعظم یونیورسٹی میں لسانی طلبا تنظیموںکے احتجاج کے باعث 9 وےں دن بھی تدریسی اور انتظامی عمل مکمل طور پر معطل رہا،جامعہ کے پروچانسلر وفاقی وزےر برائے تعلےم وپےشہ وارانہ تربےت انجےنئر محمد بلےغ الرحمان نے ہڑتالی طلباکے نمائندہ وفد سے ملاقات کرکے مطالبات کے حل کی ےقےنی دہائی کرائی تاہم ہڑتالی طلباءنے ےقےن دہانی کے باوجود ہٹ دھرمی کامظاہر کرتے ہوئے ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کر دیا ہے،جبکہ طلبا ءکی حمایت میں دو سےنےٹرز نے بھی طلبا کے احتجاجی کیمپ میں شرکت کی۔تفصیلات کے مطابق ملک کی پہلے نمبر پر آنے والی قائداعظم یونیورسٹی کو جھگڑا کرنے پر یونیورسٹی سے نکالے گئے لسانی تنظیموں کے طلبا نے اپنی بحالی کے لیے احتجاج کے9دنوں سے ذریعے یرغمال بنا رکھا ہے ۔یونیوورسٹی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ان طلبا نے 13مطالبات سامنے رکھے ہیں جن میں سے 12پر ان سے بات کر سکتے ہیں لیکن نکالے گئے طلبا کی بحالی کا مطالبہ منظور نہیں ہو سکتا ہے کیانکہ یونیورسٹی کے سینڈیکیٹ نے یہ فیصلہ کیا ہے اور وہی فورم اس کا از سر نو جائز ہ لینے کا مجاذہے۔ جمعرات کو دو سےنےٹرز نے جامعہ مےں ہڑتالی طلبا کے کیمپ کا دورہ کیا اور ان سے خطاب کرکے ہر ممکن تعاون کی ےقےن دہانی کرا دی ۔ان میں سینیٹر میر کبیر اور سینیٹر عثمان کاکڑ شامل ہیں ،سینیٹر میر کبیر نے طلبا سے خطاب میں یونیورسٹی میں طلبا ءتنظیموں پر پابندی کی مخالفت کردی ہے۔قائداعظم ےونےورسٹی مےں9دنوں سے احتجاج کرنے والے لسانی طبلا تنظیموں کے رہنماﺅں محمد اصغر ، جہانزےب وزےر ، فرقان کی سربراہی مےں اےک وفد نے جمعرات کو وفاقی وزیرتعلےم انجےنئر محمدبلےغ الرحمن سے ملاقات کی اس دوران طلبا نے ےونےورسٹی سے نکالے جانے والے طلباءکی بحالی سمےت دےگر مطالبات بارے وفاقی وزےر تعلےم کو آگاہ کےا جس پر وفاقی وزےر نے زےادہ تر مطالبات کو حل کرنے کی ےقےن دہانی کرائی گئی اور وفاقی وزےر نے جمعرات رات کو ےونےورسٹی کا دورہ کرکے معاملات کو حل کرنے کا کہا جس پر طلبا کی جانب سے موقف اختےار کےا گےا کہ نو دنوں سے ہڑتال کر رکھی ہے لےکن وزیر تعلیم کی طرف سے ےونےورسٹی کے پرو چانسلر ہونے کے ناطے اےک دفعہ بھی طلبا سے پوچھا تک نہےں کہ انہےں کےا مسائل درپےش ہےںادھر سےنےٹر عثمان خان کاکڑ اور سےنےٹر مےر کبےر نے جمعرات کو ےونےورسٹی جاکر ہڑتالی طلبا سے خطاب کےا اس دوران ان کا کہنا تھا کہ طلبا کے جائز مطالبات کےلئے وفاقی وزےر تعلےم سمےت چےئرمےن اےچ ای سی اور وی سی جامعہ سے ملاقات کرکے اس مسئلہ کو حل کرائےں گے جبکہ طلبا کے اےک وفد نے جمعرات کو تحرےک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اسد عمر سے بھی ملاقات کرکے اپنے تحفظات سے آگاہ کےا ہے۔دوسری طرف یونیورسٹی انتظامیہ نے آج بھی یونیورسٹی کو بند رکھنے کا اعلان کیا ہے۔