مسلم لیگ کی قیادت 12 اکتوبرکو یوم سیاہ منانا بھول گئی

اسلام آباد (محمد نواز رضا+ وقائع نگار خصوصی) مسلم لیگ (ن) کی قیادت 12 اکتوبر 2017ءکو جنرل پرویز مشرف کے نوازشریف کی حکومت کا تختہ الٹنے کی یاد میں ”یوم سیاہ“ منانا بھول گئی۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور راولپنڈی میں کوئی تقریب منعقد نہیں ہوئی۔ تاہم مسلم لیگی رہنما چودھری محمد ریاض نے گوجرخان میں یوم سیاہ کے سلسلے میں تقریب منعقد کی اور جنرل پرویز مشرف کے خلاف نعرے لگوائے ۔ ذرائع کے مطابق یوم سیاہ منانے کے سلسلے میں پارٹی کی طرف سے کوئی گائیڈ لائن نہیں دی گئی۔ جس کے باعث مسلم لیگ ن نے باضابطہ طور پر کوئی علامتی جلسہ بھی منعقد نہیں کیا۔ جب نوائے وقت نے پارٹی کے ایک سینئر رہنما سے یوم سیاہ نہ منانے کے بارے میں استفسارکیا تو انہوں نے معنی خیز جواب دیا ان کی گفتگو سے یہ تاثر ملتا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کی قیادت موجودہ صورتحال میں فوج سے محاذ آرائی کا تاثر نہیں دینا چاہتی۔ محاذ آرائی اور تصادم کی پالیسی کے خلاف ہے۔ اس عنصر نے میاں نوازشریف کو فوج کے خلاف محاذ آرائی کی پالیسی ترک کرنے پر آمادہ کر لیا ہے۔ 12 اکتوبر کو یوم سیاہ منانا بھی ان ہی کوششوں کا نتیجہ نظر آتا ہے۔ ذرائع کے مطابق شاہد خاقان عباسی نے قومی اسمبلی میں کیپٹن (ر) محمد صفدر کے ریاستی اداروں کے بارے میں بیان کا نوٹس لے لیا ہے۔ ان سے باضابطہ طور پر جواب طلبی کی جا رہی ہے۔