آئندہ قدم: افغان طالبان کے دو سینئر نمائندوں کے اسلام آباد میں خفیہ مذاکرات

اسلام آباد (رائٹر) اس انکشاف کے بعد کہ افغان طالبان نے افغانستان کی طویل جنگ کے خاتمے کے لئے مذاکرات پر آمادگی ظاہر کی ہے، طالبان کے سینئر نمائندوں نے آئندہ کے لئے اقدامات پر خفیہ طور پر بات چیت کے لئے پاکستان کا دورہ کیا ہے۔ رائٹر کے مطابق وہ پاکستان سے یہ واضح پیغام واپس لے کر گئے ہیں کہ طالبان کو دو اعلیٰ رہنمائوں کے درمیان کشیدگی ختم کرکے متحد ہوجانا چاہئے۔ یہ وارننگ ایک یاددہانی بھی تھی کہ افغان حکومت اور عسکریت پسندوں کے لئے ایک ہی میز پر بیٹھنا کس قدر مشکل ہوگا۔ یہ دو سینئر طالبان شخصیات سیاسی رہنما ہیں جن میں اختر محمد منصور جو مذاکرات کے حامی ہیں، کمانڈر عبدالقیوم ذاکر گوانتاناموبے جیل میں قید بھی رہے ہیں، وہ کابل سے مذاکرات کے مخالف تھے۔