سیاسی جماعتیں مسئلہ کشمیر کے حل کو ترجیحات میں شامل کریں : راجہ ظفر الحق

سیاسی جماعتیں مسئلہ کشمیر کے حل کو ترجیحات میں شامل کریں : راجہ ظفر الحق

اسلام آباد( وقائع نگار خصوصی)ایوان بالا میں قائد ایوان راجہ ظفر الحق نے کہا ہے کہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے، کشمیر کا حل کشمیر ی عوام کی امنگوں اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرایا جائے گا، پاکستان ہر اہم فورم پر مسئلہ کشمیر کو بھر پور انداز میں پیش کررہا ہے۔جمعہ کو آزاد جموں کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کی اصل صورتحال سے آگاہی دلانے کے لیے آزاد جموں کشمیر کی قانون سازاسمبلی ، حریت کانفرنس اورتمام سیاسی جماعتوں کے نمائندوں پر مشتمل 15رکنی وفد نے قائد ایوان سینیٹ سینیٹر راجہ محمد ظفرالحق سے پارلیمنٹ ہاؤس میں ملاقات کی اور کشمیر کی اصل صورتحال بارے آگاہ کیا۔ کشمیر کے وفدنے قائد ایوان سینیٹ کو بتایا کہ وزیر اعظم پاکستان سمیت پاکستان کی تمام سیاسی جماعتوں کی لیڈر شپ سے اجتماعی ملاقاتیں کی جائیں گی اور آج کی ملاقات اس سلسلے کی پہلی کڑی ہے۔ وفدنے قائد ایوان سے کہا کہ پاکستان کی قومی اسمبلی اور سینٹ میں یوم کشمیر 5فروی بھر پور طریقے سے منایا جائے اور قومی سطح پر کشمیر کے بارے میں ایک تھنک ٹینک ترتیب دیا جائے جو حکومت پاکستان ، سیاسی جماعتوں اور پارلیمنٹ ہاؤ س کو کشمیر بارے رپورٹ پیش کرتا رہے۔کشمیر سے تعلق رکھنے والے وفد کے تمام اراکین نے فرداًفرداً قائد ایوان سینٹ سینیٹر راجہ محمد ظفرالحق کی کشمیریوں کے لیے جدوجہد آزادی کو قومی اور بین الاقوامی سطح پر حمایت اور مسلسل نمائندگی کرنے پر خراج عقیدت بھی پیش کیا۔ وفد نے اس بات پر بھی زور دیا کہ پاکستان کا میڈیا بھی مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی سطح پر موثر اندا ز میں پیش کرنے کے لیے بہتر پروگرام ترتیب دیں۔ وفد نے آزادجموں کشمیر ٹی وی کی حالت و کارکردگی بہتری بنانے کے لیے توجہ مبذول کروائی اور کہا کہ آزاد جموں کشمیر کے ریڈیو کو بھی موثر پروگرام ترتیب دینے چاہیے اور ان کی بیرون ممالک رسائی یقینی بنانی چاہیے۔ مقررنین نے مقبوضہ کشمیر میں حق خود ارادیت کے حصول کے لیے بے پناہ قربانیاں دینے والوں کو خراج تحسین پیش کیا اور ان کی اس جدوجہد میں شان بشانہ کھڑے ہونے کا عزم بھی کیا۔عبدالرشید ترابی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے کوئی غلط فہمی میں نہ رہے کہ ملک کے تمام سیاست دان ،دانشور اور اہل قلم ایک صفحے پر نہیں ہیں۔ اس مسئلے کا جلد حل نکلے گا۔ چوہدری لطیف اکبر صدرآزاد کشمیر پاکستان پیپلز پارٹی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے خارجہ امور میں ایک متفقہ خارجہ پالیسی اختیار کی جائے اور اس پر بھرپور عمل درآمد کرایا جائے۔ نائب صدر تحریک انصاف خواجہ فاروق احمد نے کہا کہ آزاد کشمیر کے ٹی وی کو فعال اور ریڈیو کو پہلے کی طرح مضبوط کرنا ہوگا تاکہ وہ انڈیا کے پروپیگنڈا کا مقابلہ کرسکے۔مولانا سعید یوسف نے کہا کہ کشمیر کا اشو حساس اور اہم ترین ہے اور ملک کی تمام سیاسی جماعتیں مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرانے پر متفق ہیں۔ پاکستان کا موقف کشمیر پر واضح ہے صرف جامع پالیسی اختیارکرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک تھنک ٹینک بنایا جائے جو مسئلہ کشمیر کے حل حوالے سے میکنزم تیا ر کرے۔ کنوینر حریت کانفرنس فیض نقشبندی نے کہا کہ کشمیری عوام پر بھارتی فو ج نے ظلم و بربریت کے پہاڑ توڑے ہیں۔مگرکشمیر ی عوام نے ان کا بھرپور سامنہ کیا ہے۔ 14اگست بھرپور طریقے سے منایا جاتا ہے اور 15اگست بلیک ڈے کے طور پر منایا جاتا ہے۔ پاکستا ن کی قومی و صوبائی اسمبلیوں سے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے متفقہ قراردادیں پاس ہونی چاہییں۔ بیرون ممالک میں قائم ہمارے سفارتخانوں میں کشمیر کے بارے تفصیلی معلومات دینے کے ڈیکس قائم کیے جائیں۔ لبریشن فنڈز کے ڈاکٹر رفیق ڈار نے کہا کہ جب بھی انڈیا سے ڈائیلاگ کیے جائیں تو تینوں فریقین موجود ہوں اور بیرون ممالک جانے والے پاکستانی وفود کے ہمراہ کشمیری پارلیمنٹرین بھی شامل ہوں۔ ڈاکٹر خالد محمود خان امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ پاکستان کے استحکام اور مضبوطی کے لیے کشمیری ہمیشہ ساتھ رہے ہیں۔ غلام محمد صفی کنوینر حریت کانفرنس نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے منصافانہ حل کے لیے موثر میکنزم تیا رکیاجائے اورپاکستان میں تعینات مسلم اور غیر مسلم سفراء کے ساتھ اجتماعی ملاقات کرکے کشمیر کی اصل صورتحال سے آگاہ کیا جائے۔ سپیکر قانون ساز اسمبلی آزاد کشمیرشاہ غلام قادر نے کہا کہ پاکستان میں ہونے والے انتخابات میں تما م سیاسی جماعتیں اپنے سیاسی جلسوں میں مسئلہ کشمیر پر ضرور بات کریں۔ سینٹ اور قومی اسمبلی میں سیاسی پارلیمانی لیڈروں کو بھی اصل صورتحال سے آگاہ کیا جائے۔ قائد ایوان سینٹ نے وفد کے نمائندگان کا پارلیمنٹ آمد کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے اور کشمیر کا حل کشمیر ی عوام کی امنگوں اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرایا جائے گا اور پاکستان ہر اہم فورم پر مسئلہ کشمیر کو بھر پور انداز میں پیش کررہا ہے۔ کشمیر کے وفدمیں شاہ محمود قادر سپیکر قانون ساز اسمبلی و سیکرٹری جنرل پاکستا ن مسلم لیگ ن، کنوینر کل جماعتی کشمیر رابطہ کونسل عبدالرشید ترابی ،صدر پاکستان پیپلز پارٹی آزاد کشمیر ، چوہدری لطیف اکبر، امیر جماعت اسلامی آزاد کشمیر ڈاکٹر خالد محمود خان ، نائب صدر تحریک انصاف خواجہ فاروق احمد ،سیکرٹری جنرل کل جماعتی کشمیر رابطہ کونسل، چوہدری مطلوب انقلابی ، ممبر قانون ساز اسمبلی صغیر چغتائی ، امیر جمعیت علماء اسلام مولانا سعید یوسف،کنوینر حریت کانفرنس غلام محمد صفی، کنوینر حریت کانفرنس میر واعظ فیض نقشبندی ، سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی آزاد کشمیر محمد ذاکر خان شامل تھے ۔