عالمی سطح پر تیل کی قیمتوں میں کمی کے باوجود مہنگائی کا زور نہ ٹوٹ سکا: وفاقی ادارہ شماریات

اسلام آباد (ثناء نیوز )عالمی سطح پر تیل اور خوردنی اشیاء کی قیمتوں میں کمی کے باوجود رواں مالی سال کی پہلی ششماہی (جولائی تا دسمبر) کے دوران افراط زر کی شرح 25فیصد کے قریب ریکارڈ کی گئی ہے۔وفاقی ادارہ شماریات کی جاری ہونے والے اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران افراط زر کی شرح 24.43فیصد ریکارڈ کی گئی ہے جو گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کی نسبت بالترتیب8.01،11.03 اور10.26 فیصد تھیں۔ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ سال دسمبر کی نسبت رواں سال دسمبر کے دوران غذائی اجناس اور مشروبات کی قیمتوں میں 27.92فیصد، ٹیکسٹائل اور جوتوں وغیرہ کی قیمتوں میں 15.72فیصد، ہاوس رینٹ کی قیمتوں میں 17.56فیصد، ایندھن اور روشنی کے آلات کی قیمتوں میں 29.53فیصد، گھریلو، فرنیچر اورآلات کی قیمتوں میں 14.61فیصد،نقل و حمل اور مواصلات کے اخراجات کی قیمتوں میں 25.71فیصد، تعلیم کے اخراجات میں17.01فیصد، صفائی ستھرائی ، لانڈرنگ اور ذاتی زیب و آرائش کے اخراجات میں 19.77فیصد اور طبی اخراجات میں 12.67فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔