’’پاکستانی رویہ‘‘ کانگرس کو انتخابی فائدہ پہنچانے کا معاملہ بھی کارفرما ہے‘‘

اسلام آباد (سہیل عبدالناصر) ممبئی میں دہشت گردی کی واردات کے بعد پاکستان کے کمزور اور معذرت خواہانہ رویہ کے پس پردہ بھارت حکمران جماعت کانگرس کو انتخابی فائدہ پہنچانے کا معاملہ بھی کارفرما ہے۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ ممبئی دہشت گردی کے دوران ہونے والے ریاستی انتخابات میں کانگرس نے غیرمتوقع طور پر تین ریاستوں میں نمایاں کامیابی حاصل کی ہے۔ ایک مستند سرکاری ذریعہ کے مطابق سلامتی کونسل کی جانب سے پابندی عائد کئے جانے سے قبل اہم حکومتی شخصیات نے کالعدم جماعۃ الدعوۃ کی قیادت سے رابطہ کر کے انہیں کسی ایسے لائحہ عمل اختیار کرنے پر آمادہ کرنے کی کوشش کی جس کی وجہ سے بھارت کی حکمران جماعت کانگرس کو اپنی ساکھ بحال کرنے کا موقع مل سکے۔ یہ روابط ابھی جاری تھے کہ بھارت نے سفارتی جارحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے سلامتی کونسل سے جماعۃ الدعوۃ کو دہشت گرد قرار دلوا دیا۔ اگلے برس بھارت میں عام انتخابات منعقد ہونے ہیں۔ کانگرس کی یہاں مشکلات کے حوالے سے کانگرس اور پاکستان کے حکمران اتحاد کے درمیان بالواسطہ روابط بھی ہوئے ہیں اور ان ہی کے نتیجے میں پاکستان نے ابھی تک بھارتی الزامات اور جارحانہ رویہ کے جواب میں کوئی واضح مؤقف اختیار نہیں کیا۔