عدالتی پالیسی ساز کمیٹی کا اجلاس‘ پرانے مقدمات نمٹانے کی تاریخ میں 31 دسمبر تک توسیع

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) قومی عدالتی پالیسی کے نفاذ کے بعد قیدیوں کی تعداد میں کمی ہوئی ہے جس کی وجہ مقدمات کے جلد فیصلے ہیں۔ یہ بات آئی جیز جی جیل خانہ جات نے سپریم کورٹ میں ہونے والے ایک اجلاس کو بتائی۔ قومی عدالتی پالیسی ساز کمیٹی کے اجلاس کی صدارت رجسٹرار سپریم کورٹ نے کی جبکہ اس میں فیڈرل شریعت کورٹ‘ چاروں ہائی کورٹس کے رجسٹرارز‘ صوبائی پراسیکیوٹر جنرلز اور آئی جیز جیل خانہ جات نے شرکت کی۔ آئی جی جیل خانہ جات پنجاب نے بتایا کہ پنجاب کی جیلوں میں عدالتی پالیسی سے قبل قیدیوں کی تعداد 63 ہزار تھی جو اب 51 ہزار رہ گئی ہے۔ اسی طرح دیگر صوبوں میں بھی قابل ذکر کمی ہوئی ہے۔ اجلاس میں ضلعی فوجداری رابطہ کمیٹیوں کے اجلاس ماہانہ بنیادوں پر منعقد کرانے کا فیصلہ کیا گیا کیونکہ مذکورہ کمیٹیاں انصاف کی جلد فراہمی میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ اجلاس میں پرانے مقدمات نمٹانے کی تاریخ 31 دسمبر 2010ءتک بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا۔