صدر زرداری کے ذاتی معالج ڈاکٹر عاصم پر نوازشات کی بھرمار

اسلام آباد (قاضی بلال) صدر آصف زرداری کے ذاتی معالج ڈاکٹر عاصم حسین پر نوازشات کی بھرمار کر دی گئی۔ پہلے وہ مشیر پٹرولیم رہے۔ پھر چیئرمین این آر بی بنا دیئے گئے موصوف نے دونوں عہدوں کو چھوڑ دیا اور وہ آج کل پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل (پی ایم ڈی سی) کے نائب صدر اور صدر زرداری کے ذاتی معالج کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ ذاتی معالج کی حیثیت سے جاری نوٹیفکیشن میں جاری مراعات سے کہیں زیادہ انہیں مراعات حاصل ہیں اور انہوں نے منسٹر کالونی میں رہائش اختیار کر رکھی ہے۔ نوائے وقت کو موصول دستاویزات کے مطابق 12 دسمبر 2009ءکو ڈاکٹر عاصم حسین کی بطور صدر ذاتی معالج تقرری کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا اور انہیں ساتھ ہی چیئرمین این آر بی (قومی تعمیر نوبیورو) مقرر کیا گیا۔ جو بغیر تنخواہ کے کام کریں گے۔ اس سے قبل وزیراعظم نے بھی سات مئی دو ہزار آٹھ کو ڈاکٹر عاصم کی بطور چیئرمین این آر بی کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔ دوسرے نوٹیفکیشن میں دراصل ڈاکٹر عاصم کو منسٹر کالونی میں گھر دینے کےلئے وفاقی وزیر کا اضافی سٹیٹس بھی دیا گیا اور انہیں ٹیلی فون، ٹرانسپورٹ، ٹی اے ڈی اے اور دیگر سٹاف کی سہولیات بھی دی گئیں۔ واضح رہے کہ ڈاکٹر عاصم دو کروڑ روپے کی بلٹ پروف گاڑی استعمال کر رہے ہیں اور ساتھ پولیس کا سکواڈ ہر جگہ ان کے ساتھ ہوتا ہے۔ ڈاکٹر عاصم کو یہ مراعات رولز سے ہٹ کر دی جارہی ہیں جبکہ ان کے مقابلے میں صدر کے ایک اور معالج میجر جنرل اظہر کیانی کے پاس اس کی کوئی سہولت نہیں ہے۔