دھرنے والوں کا احتجاج ریکارڈ ہو چکا اب واپس چلے جائیں: پرویز رشید

دھرنے والوں کا احتجاج ریکارڈ ہو چکا اب واپس چلے جائیں: پرویز رشید

اسلام آباد (آن لائن) وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات پرویز رشید نے کہا ہے کہ حکومت کی کوشش ہے کہ دھرنے والوں کے تمام مطالبات اور مسائل مذاکرات کے ذریعے حل ہو جائیں‘ پارلیمنٹ کے تمام فیصلے ماننے کے پابند ہیں‘ آئین مضبوط کرنے کیلئے نئے قانون بننے چاہئیں۔ دھرنے والوں کا احتجاج ریکارڈ ہو چکا ہے اب وہ واپس چلے جائیں، ان پر طاقت کا استعمال کبھی نہیں کیا جائے گا۔ بدھ کے روز پارلیمنٹ ہائوس کے باہر صحافیوں سے گفتگو کے دوران  انہوں نے کہا کہ تمام مہذب ریاستوں کے اندر ایک قانون  ہوتا ہے اور جو اس قانون کی خلاف ورزی کرتا ہے ریاست کا فرض بنتا ہے کہ اس کے خلاف کارروائی کرے‘ تاہم حکومت نے دھرنے والوں پر ابھی تک کوئی بھی طاقت کا استعمال نہیں کیا کیونکہ پاکستان ایک آئین کے تحت چل رہا ہے اور اس کی پاسداری کرنا حکومت کا فرض ہے۔ حکومت صبر و تحمل سے کام لے رہی ہے اور اب تک کوئی بھی دبائو قبول نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ دھرنے والے اگر مذاکرات نہیں کریں گے تو کیا کریں گے؟ مذاکرات کے علاوہ کوئی مسئلہ حل نہیں ہوگا کیونکہ مذاکرات میں دلیل سے بات ہوتی ہے تاہم مذاکرات کا عمل جاری رہنا چاہئے اور مذاکرات کے عمل پر کوئی تبصرہ نہیں کرنا چاہئے اس کی وجہ سے مذاکراتی عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔  دھرنوں سے صرف پاکستان کی معیشت کو نقصان پہنچ رہا ہے، تمام سیاستدان بالخصوص عمران خان اور طاہر القادری سیلاب کے نقصان کو پورا کرنے کیلئے حکومت کا ساتھ دیں۔