وکلاء کا مس کنڈکٹ‘ سپریم کورٹ نے 65 ہزار روپے جرمانہ کی سزا سنا دی

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت)سپریم کورٹ نے وکلاء کے مس کنڈکٹ، عدم تیاری اور عدالتی وقت ضائع کرنے پر 65ہزار روپے جرمانے کی سزا دیدی۔ جسٹس جواد ایس خواجہ نے قرار دیا کہ سینئر وکلاء کراچی سے آتے ہیں، عدالت کے ساتھ ساتھ فریقین کا وقت اور پیسہ بھی ضائع ہوتا ہے، پٹیشن میں بھی ہر دوسری لائن میں غلطی ہے، گزشتہ تین سماعتوں سے یہی ہو رہا ہے، عدالت اس طرح کی وکالت کی اجازت نہیں دے سکتی، عدالت نے بنکنگ کیس میں وکیل ملک شکیل الرحمن خان کو 15ہزار جرمانہ جبکہ رٹ پٹیشن کی سماعت میں وکیل ملک محمد لطیف کھوکھر کو 50ہزار جرمانے عائد کرتے ہوئے رقم قومی خزانے میں رقم جمع کروانے کی ہدایت کی۔