سائبر کرائم کی روک تھام کیلئے قانون سازی کی جائے‘ قائمہ کمیٹی

اسلام آباد (جاوید صدیق) وزارت اطلاعات و نشریات کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات نے قومی اسمبلی میں جو رپورٹ پیش کی ہے اس میں تجویز دی گئی ہے کہ سائبر کرائم کی روک تھام کے لئے جلد سے جلد قانون سازی کی جائے۔ نئی قانون سازی میں جعلی فیس بک اکاؤنٹس بنانے والوں اور گوگل آئی ڈیز بنانے والوں کا سراغ لگایا جائے۔کمیٹی نے یہ سفارش بھی کی ہے کہ بین الاقوامی کمپنیاں جن میں فیس بک‘ ٹویٹر‘ گوگل‘ ہاٹ میل شامل ہیں حکومت پاکستان سے سائبر جرائم میں ملوث عناصر کا پتہ چلانے میں تعاون کریں۔مختلف ملکوں سے بھی انٹرنیٹ کو جرائم اور دہشت گردی کے استعمال کرنے کی روک تھام کے لئے سمجھوتے ہو سکتے ہیں۔ انٹرنیٹ کمپنیوں کو سیلف ریگولیشن کا نظام اختیار کرنا چاہئے اورعالمی کوڈ آف کنڈکٹ بھی تیار کرنا چاہئے۔قائمہ کمیٹی نے سوشل میڈیا کو انتہاپسندی اور دہشت گردی کے خلاف رائے عامہ بیدار کرنے کے لئے استعمال کرنے کی بھی سفارش کی ہے یہ سفارش بھی کی گئی ہے کہ سوشل میڈیا کی مانیٹرنگ کی جانی چاہئے کمیٹی نے اس رائے کا اظہار کیا ہے کہ روایتی پرنٹ میڈیا کی جگہ اب سوشل میڈیا نے لے لی ہے اور سوشل میڈیا پرنٹ میڈیا کے مواد کو اپنے مخصوص زاویہ سے استعمال کر رہا ہے۔