اسلام آباد : پمز ہسپتال سے نومولود اغوا، ورثا کا احتجاج، ڈاکٹروں، نرسوں سمیت 35 افراد پر مقدمہ

 اسلام آباد (خبر نگارخصوصی/ آن لائن) اسلام آباد کے سب سے بڑے ہسپتال پمز کے گائنی وارڈ سے دو دن کے نومولود بچے کو اغواءکرلیا گیا۔ ہسپتال کے سی سی ٹی وی کیمرے خراب ہونے کے باعث ملزموںکا سراغ نہ لگایا جاسکا۔ ہسپتال انتظامیہ نے مغوی بچے کے ورثاءکی مشاورت کے بغیر تھانہ مارگلہ میں نامعلوم خاتون کیخلاف مقدمہ درج کرایا تو متاثرہ خاندان سراپا احتجاج بن گیا۔ شدید احتجاج کے بعد انتظامیہ نے متاثرہ خاندان کی درخواست پر ہسپتال کے ڈاکٹروں، نرسوں اور دیگر 35 افراد کیخلاف بچے کے اغواءکا مقدمہ درج کرلیا۔اسلام آباد ہائی وے اور پمز ہسپتال کے چاروں اطراف میں گزرنے والے روڈ کو کئی گھنٹے تک بند کردیا گیا۔شدید احتجاج کے بعد مقامی ایم این اے ڈاکٹر طارق فضل چوہدری اور آئی جی اسلام آباد کے ساتھ مذاکرات کامیاب ہوگئے۔ متاثرہ خاندان نے اڑتالیس گھنٹوں میں بچے کی بازیابی کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔
بچہ اغوا