سیلاب، 6 امریکی اور 4 افغان ہیلی کاپٹرز بھی امدادی سرگرمیوں میں مصروف

اسلام آباد (سہیل عبدالناصر) متاثرین سیلاب کی امداد کیلئے اس وقت دس غیر ملکی ہیلی کاپٹر پاکستانی فضاﺅں میں اڑ رہے ہیں۔ ان میں چھ ہیلی کاپٹر امریکہ نے اور چار افغانستان نے فراہم کئے ہیں جبکہ متحدہ عرب امارات سے تین عدد چنوک ہیلی کاپٹر ابھی پاکستان پہنچے ہیں۔ پاکستان یہ امید لگائے بیٹھا ہے کہ امریکہ مزید ہیلی کاپٹر فراہم کر سکتا ہے جبکہ سعودی عرب، ترکی، چین اور بعض دیگر دوست ملک بھی اپنے فضائی اثاثے پاکستان بھجوا سکتے ہیں لیکن اس ضمن میں ابھی تک ٹھوس پیشرفت نہیں ہو سکی۔ ذرائع کے مطابق امریکہ کے چار چنوک اور دو بلیک ہاک ہیلی کاپٹر سوات اور ملاکنڈ کے علاقے میں متاثرین کی مدد کر رہے ہیں۔ یہ ہیلی کاپٹر امریکی ہوا باز خود اڑا رہے ہیں۔ 2005ءکے بدترین زلزلے کے بعد بھی امریکہ کے فوجی ہیلی کاپٹروں نے آزاد کشمیر کے حساس علاقے میں امدادی آپریشن میں حصہ لیا تھا۔ اس کے بعد یہ دوسرا موقع ہے کہ سلامتی کے اعتبار سے پاکستان کے ایک اور حساس علاقے میں امریکہ کے فوجی ہیلی کاپٹر امدادی آپریشن میں حصہ لے رہے ہیں۔ امریکی ہیلی کاپٹر تربیلا کے فضائی مستقر سے اڑتے ہیں اور رات کو یہیں واپس اترتے ہیں۔ افغانستان کے فراہم کردہ چار ہیلی کاپٹر پاکستانی پائلٹ اڑا رہے ہیں انہیں ایبٹ آباد کے فارورڈ آپریٹنگ بیس پر رکھا گیا ہے جہاں سے یہ کوہستان اور دیگر علاقوں میں امدادی کارروائیاں کر رہے ہیں۔