اتحاد فوج افغان سرحد پر سکیورٹی میکنزم بنانے میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے:جنرل قمر باجوہ

اتحاد فوج افغان سرحد پر سکیورٹی میکنزم بنانے میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے:جنرل قمر باجوہ

راولپنڈی (نیٹ نیوز+ ایجنسیاں) افغانستان میں امریکی افواج اور ریسلوٹ سپورٹ مشن (آر ایس ایم) کے کمانڈر جنرل جان ڈبلیو نکلسن پاکستان کے دورے پر پہنچ گئے جہاں انہوں نے شمالی وزیرستان کا دورہ کیا اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات بھی کی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملاقات کے دوران افغانستان کے امن و استحکام میں انٹرنیشنل سکیورٹی اسسٹنس فورس اور موجودہ ریسلوٹ سپورٹ مشن کے کردار کی تعریف کی۔ انہوں نے افغانستان کو درپیش چیلنجز سے تنہا نمٹنے کے حوالے سے افغان نیشنل سکیورٹی فورسز کی استعداد و قابلیت میں اضافے میں آر ایس ایم کی مسلسل معاونت کا بھی اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں امن و استحکام کےلئے اتحادی فوج کا کردار قابل تعریف ہے۔ انہوں نے پاک افغان مشترکہ بارڈر سکیورٹی مکینزم کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ پاک افغان سرحد پر سکیورٹی مکینزم بہتر بنانے کےلئے اتحادی فوج اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔ بعد ازاں جنرل جان نکلسن نے آرمی چیف کے ہمراہ شمالی وزیرستان کے علاقے میرانشاہ کا دورہ کیا۔ کور کمانڈر پشاور لیفٹننٹ جنرل نذیر احمد بٹ نے جنرل نکلسن اور جنرل قمر جاوید باجوہ کا استقبال کیا جبکہ جنرل آفیسر کمانڈنگ نے جنرل نکلسن کو آپریشن ضرب عضب، سماجی و اقتصادی سرگرمیوں اور متاثرہ افراد کی واپسی کے حوالے سے کیے جانے والے اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید اور جنرل نکولسن کو میرانشاہ بازار کا بھی دورہ کرایا گیا جہاں انہوں نے پاک فوج کی جانب سے کیے جانے والے ترقیاتی کاموں کا معائنہ کیا۔ اس موقع پر جنرل جان نکلسن نے پاک فوج کی جانب سے کیے جانے والے کامیاب آپریشنز کی تعریف کی اور اس بات کا اعتراف کیا کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان دوطرفہ بارڈر سکیورٹی کوآرڈینیشن کو مربوط بنانا ضروری ہے۔