گیس پائپ لائن منصوبہ امریکی پابندیوں کی وجہ سے رکا‘ ایران کو جرمانہ ادا نہیں کریں گے: سرتاج عزیز

گیس پائپ لائن منصوبہ امریکی پابندیوں کی وجہ سے رکا‘ ایران کو جرمانہ ادا نہیں کریں گے: سرتاج عزیز

اسلام آباد(ثناء نیوز) مشیرخارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ پاکستان ایران گیس منصوبہ ختم نہیں  ہوا امریکی پابندیوں کی وجہ سے رکا ہوا ہے پابندیاں ختم ہونے کا انتظار ہے ۔ کچھ پابندیاں  ختم ہو گئی ہیں امید ہے باقی  اگلے مرحلے میں ختم ہو جائیں گی جیسے ہی  تمام پابندیاں ختم ہوں گی اس منصوبے  کو ترجیحی  بنیادوں پر  اڑھائی سال  کے اندر  مکمل  کر دیا جائے گا  تاہم منصوبہ  مکمل نہ کرنے پر پاکستان ایران کو جرمانہ  ادا نہیں کرے گا کیونکہ  گیس منصوبے پر کام کے لئے 500 ملین ڈالر ایران نے دینے سے انکار  کر دیا ہے اب پاکستان پر بھی جرمانے کا اطلاق نہیں ہوتا ۔ ایک نجی ٹی وی انٹرویو میں سرتاج عزیز نے کہا کہ  امریکی پابندیاں  ختم ہونے پر منصوبے پر کام  شروع ہو جائے گا سرتاج  عزیز نے مزید کہا کہ  پاکستان یا ایران کے پاس پیسے  ہوتے تو امریکی پابندیوں کے باوجود  گیس منصوبہ  مکمل کیا جا سکتا تھا ۔انہوں نے کہا کہ  پاکستان کی سعودی عرب سے اسلحہ کی ڈیل  کے بارے میں غلط خبر چلانے پر  خبر ایجنسی سے احتجاج کیا ۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے پاکستان کے چھوٹے ہتھیاروں میں دلچسپی  ظاہر کی ہے ۔ سرتاج عزیز  نے کہا کہ ہم نے شام پر جو پوزیشن لی ہے وہ اقوا متحدہ  کی رائے کے مطابق ہے  ہمارے موقف  پر شامی حکومت نے شکریہ ادا کیا ہے کیونکہ شام سے متعلق ہماری  پالیسی میں  غیر جانبداری  نمایاں  ہے ۔