جسٹس (ر) تصدق جیلانی کو چیف الیکشن کمشنر بنانے کیلئے کوششیں شرو ع

اسلام آباد (اے پی اے) سابق چیف جسٹس  تصدق حسین  جیلانی کو چیف الیکشن کمشنر بنانے کیلئے کوششیں شروع ہو گئیں۔ حکومت اور اپوزیشن کے درمیان نئے چیف الیکشن کمشنر کیلئے ریٹائرڈ چیف جسٹس تصدیق حسین جیلانی پراتفاق رائے موجود ہے۔اگرچہ سبکدوش چیف جسٹس نے اپنی ریٹائرمنٹ سے چند روز قبل اشارہ دیدیا تھا کہ وہ چیف الیکشن کمشنر کیلئے اپنی خدمات پیش کرنے کو تیار نہیں ہیں لیکن ملک کے موجودہ حالات میں الیکشن کمشن کی از سر نو تشکیل اور انتخابی اصلاحات کو قابل عمل بنانے کیلئے ان سے عہدہ قبول کرنے کیلئے حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے درخواست کئے  جانے کا امکان ہے۔ متعبر ذرائع کے مطابق چیف الیکشن کمشنر کے تقرر کے عمل میں گزشتہ تین ماہ میں سپریم کورٹ کے احکام کے باوجود پر اسرار خاموشی سے یہ طے ہو رہا تھا کہ حکومت اور اپوزیشن جسٹس تصدق حسین جیلانی کو بطور چیف الیکشن کمشنر تقرر کرنے پر آمادہ ہیں اور ان کی بطور قائم مقام چیف الیکشن کمشنر تقرر کے دوران الیکشن کمیشن کے اندر پائی جانیوالی خامیوں اور اس کی اصلاح کے حوالے سے جسٹس جیلانی کی کاوشوں کو مد نظر رکھتے ہوئے انھیں 5 سال کیلئے چیف الیکشن کمشنر مقرر کرنے پر حکومت اور اپوزیشن کے درمیان اتفاق ہوا تھا۔ تصدق جیلانی کے نام پرحکومت اور اپوزیشن لیڈر میں اتفاق رائے ہے تاہم اپوزیشن لیڈر کی کوشش ہے کہ تحریک انصاف کو اس پر آمادہ کر لیں۔