آپریشن سے معیشت پر اثر نہیں پڑیگا، لانگ مارچ عدلیہ، الیکشن کمشن کیخلاف ہے: پرویز رشید

آپریشن سے معیشت پر اثر نہیں پڑیگا، لانگ مارچ عدلیہ، الیکشن کمشن کیخلاف ہے: پرویز رشید

اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ+ ایجنسیاں) وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے ضرب عضب آپریشن کے معیشت پر کوئی اثرات نہیں پڑینگے، دہشتگردی کے خاتمے سے ملک میں امن قائم ہوگا اور سرمایہ کار پاکستان آئیں گے، ملک میں امان و امان کا قیام اولین ترجیح ہے، آخری دہشتگرد کے خاتمے تک آپریشن جاری رہے گا، میڈیا پر کسی بھی پابندی کے خلاف ہیں، کسی بھی چینل کی ٹرانسمیشن نہیں روکی جائیگی۔ ایک انٹرویو میں  انہوں نے کہا حکومتی حکمت عملی کے نتیجے میں دہشت گردی کی سرگرمیوں میں کمی آئی ہے۔ انہوں نے تسلیم کیا حقیقتاً شمالی وزیرستان کے آئی ڈی پیز کو کیمپوں میں مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ ان کے پر امن گھر کا کوئی اور متبادل نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے کہا کہ آپریشن مکمل ہونے کے بعد نقل مکانی کرنے والے لوگوں کو اپنے گھروں میں واپس بھیجنے کے لئے بحالی کا عمل شروع ہو گا۔ حکومت اور پاک فوج آئی ڈی پیز کو خوراک، شیلٹر، صحت کی سہولیات اور پینے کا صاف جیسی بنیادی ضروریات فراہم کر رہی ہے۔ ثناء نیوز/ اے پی اے کے مطابق ایک بیان میں پرویز رشید نے کہاہے کہ شاہ محمود قریشی کی زبان سے شفاف الیکشن کا رونا مناسب نہیں۔ شاہ محمود قریشی ق لیگ کا 2002 کا الیکشن بھول گئے ہیں کیا، تحریک انصاف کی شفاف انتخابات کے حوالے سے کوئی تجویز ہے تو اسے انہیں پارلیمنٹ میں پیش کرنا چاہئے۔ ان کا کہنا تھا پی ٹی آئی کا لانگ مارچ عدالتی ٹربیونل اور الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف ہے، پاکستان روشن کرنے کے چراغ ظہور پیلس اور لال حویلی سے منگوائے جا رہے ہیں۔ نوائے وقت رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید نے وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ سے ملاقات کی۔ سیاسی صورتحال اور نئے آئی جی سندھ کی تعیناتی پر تبادلۂ خیال کیا گیا۔