لانگ مارچ کے دوران کسی کو شناختی کارڈ کے بغیر اسلام آباد میں داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔ ڈرائیور حضرات کاغذات لے کر آئیں۔ رحمان ملک

لانگ مارچ کے دوران کسی کو شناختی کارڈ کے بغیر اسلام آباد میں داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔ ڈرائیور حضرات کاغذات لے کر آئیں۔ رحمان ملک

کراچی ایئرپورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ رحمان ملک نے کہا کہ طاہرالقادری کو لانگ مارچ روکنے کا نہیں کہا اور نہ ہی حکومت اس کی حمایت کررہی ہے۔ مارچ کے دوران سیکیورٹی خدشات ہیں۔ کسی کو شناختی کارڈ کے بغیر اسلام آباد میں داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ ڈرائیور حضرات کاغذات لے کر آئیں جبکہ کسی حادثے کی صورت میں بس مالکان ذمہ دار ہوں گے۔ ڈرائیور اور کنڈیکٹر کے پاس مسافروں کی فہرست ہونی چاہیے۔وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ دھرنا دینا درست نہیں ہے، طاہرالقادری کو ملکی حالات اور موسم کو مدنظر رکھنا چاہیے۔ ان کا کہنا تھا کہ عوام جاننا چاہتے ہیں کہ لانگ مارچ کے اخراجات کون برداشت کرے گا۔ لانگ مارچ کی سیکیورٹی کے لیے پچیس کروڑ روپے درکار ہیں جبکہ لاکھوں لوگوں کی تلاشی لینا بھی ایک مشکل عمل ہے۔ سخت سردی میں یہ معلوم کرنا مشکل ہوگا کہ کس کے کمبل میں گرنیڈ چھپا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ شاہ رخ جتوئی کے فرار میں ملوث افراد کو سزا دی جائے گی۔