منی لانڈرنگ کیس، تحقیقات کا دائرہ مزید وسیع کرنے کیلئے ماڈل ایان کی والدہ اور دیگر ساتھیوں کو بھی شامل تفتیش کر لیا گیا

منی لانڈرنگ کیس، تحقیقات کا دائرہ  مزید وسیع کرنے کیلئے ماڈل ایان کی والدہ  اور دیگر ساتھیوں کو بھی شامل تفتیش کر لیا گیا

راولپنڈی (صباح نیوز) ماڈل ایان کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کا دائرہ کار مزید وسیع کرنے کے لئے اس کی والدہ اور دیگر ساتھیوں کو بھی شامل تفتیش کر لیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ فیڈرل بیورو آف ریونیو (ایف بی آر) کو معلومات درکار ہیں کہ ایان کی والدہ فرحت سلطان اور دبئی میں مقیم نجیب ہارون ٹیکس چوری میں تو ملوث نہیں۔ جائزہ لیا جائے گا کہ جو رقم ایان لے کر جا رہی تھیں اسے مجرمانہ سرگرمیوں میں بھی استعمال کیا جا سکتا تھا۔ ایڈیشنل ڈائریکٹر انٹرنل ریونیو قیصراشفاق کے مطابق اگر فرد جرم عائد کر دی جاتی ہے تو ایان کو 2 سال قید اور جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے۔ ڈائریکٹر جنرل ہارون ایم خان ترین کی سربراہی میں ایف بی آر ٹیم ماڈل ایان کے ٹیکس ریکارڈ اور ذریعہ آمدنی کا جائزہ لے رہی ہے کہ انہوں نے 5 لاکھ امریکی ڈالر کہاں سے حاصل کئے۔ ایان کی والدہ اور ان کے اپنے بنک اکاؤنٹس کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے جبکہ مختلف اشتہارات اور ماڈلنگ کے ذریعے حاصل کی گئی رقوم کی تفصیلات بھی ایف بی آر کے زیرِغور ہیں۔ اسلام آباد ائرپورٹ پر ایان کی آمد کے وقت سی سی ٹی وی فوٹیج بھی کسٹم حکام سے طلب کی جائے گی۔