اسلامی ممالک کو سکیورٹی خدشات سے نمٹنے کیلئے ملکر کام کرنے کی ضرورت ہے: صدر

اسلامی ممالک کو سکیورٹی خدشات سے نمٹنے کیلئے ملکر کام کرنے کی ضرورت ہے: صدر

اسلام آباد (این این آئی) صدر مملکت ممنون حسین نے اسلامی ممالک کو کثیرجہتی سیکورٹی چیلنجز سے نمٹنے کے لئے ہم آہنگی سے کام کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ انتہاپسندوں اور دہشت گردوں کی نفرت ، تشدد اور تعصب سے اسلام کی تشخص کو مجروح کرنے کی کسی صورت اجازت نہیں دی جائے گی۔ یہ بات صدر مملکت ممنون حسین نے اسلام آباد میں اسلامی ممالک کے چھٹے تھنک ٹینک فورم سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ یہ فورم پاکستان، چین انسٹیٹیوٹ، ترک ایشین سنٹر فار سٹرٹیجک سٹڈیز، کونرڈ ایڈینوئر سٹیفنگ اور سینٹ کمیٹی برائے دفاع کے تعاون سے منعقد کیا گیا ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ او آئی سی کے ستاون رکن ممالک دنیا کے کچھ اہم اور سیاسی طور پر حساس خطے میں واقع ہیں۔ ہمارا محل وقوع، ہمارے وسائل، آبادی اور ہمارا ایمان ہی ہماری طاقت ہیں۔ صدر مملکت نے کہا کہ امت مسلمہ کو آج اس طرح کے فورمز میں شریک ماہرین تعلیم، میڈیا کے نمائندوں اور پالیسی سازوں کے دانش ورانہ کردار کی اشد ضرورت ہے۔ اس طرح کے فورمز کو اس امر کا جائزہ لینا ہوگا کہ امت مسلمہ اس وقت کہاں کھڑی ہے؟ اسے کہاں ہونا چاہئے ہیں اور ہم اپنی منزل تک کس طرح پہنچ سکتے ہیں۔