او آئی سی کامیانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر مظالم بند کرنے کا مطالبہ

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) اسلامی کانفرنس تنظیم نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں اور دیگر اقلیتوںپر ظلم و ستم فوری بند کرنے اور اقوام متحدہ کو متاثرہ علاقوں تک رسائی دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق اسلامی کانفرنس تنظیم کی طرف سے پاکستان نے یہ مطالبہ پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے فیکٹ فائنڈنگ مشن کو متاثرہ علاقوں میں جانے کی اجازت دی جائے تاکہ وہ صورتحال کا حقیقی جائزہ تیار کر سکیں اس کے ساتھ تھا اقوام متحدہ اور عالمی اداروں کو بھی متاثرہ علاقوں تک محفوظ رسائی دی جائے تا کہ بے خانماں روہنگیا مسلمانوں کو فوری طور پر درکار مدد پہنچائی جاسکے۔ اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل نمائندے ایمبیسیڈر فرح عامل نے اسلامی کانفرنس تنظیم کی جانب سے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے پانچ دسمبر کو منعقدہ خصوصی اجلاس میں کہا کہ میانمار اور بنگلہ دیش کے درمیان روہنگیا مسلمانوں کے واپسی کیلئے دو طرفہ بات چیت میں پیشرفت خوش آئند ہے تاہم پرتشدد کارروائیوں کی وجہ سے ہزاروں روہنگیا مسلمان، عورتوں اور بچوں کو پڑوسی ملکوں میں پناہ حاصل کرنا پڑی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس وقت مفاہمت کی ضرورت ہے جو اسی وقت ہو سکتی ہے جب روہنگیا کے خلاف امتیازی سلوک بند کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی کانفرنس تنظیم اس مسئلہ کے تمام سٹیک ہولڈرز کے ساتھ رابطوں کیلئے تیار ہے۔ واضح رہے کہ انسانی حقوق کونسل نے اس اجلاس میں قرارداد کی منظوری دی تھی جس میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ روہنگیا مسلمانوں کے خلاف ظلم فوری طور پر بند کیا جائے۔