امریکی صدر کے اقدام سے پوری امت مسلمہ کے جذبات مجروح ہوئے‘ دفاع پاکستان کونسل

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) دفاع پاکستان کونسل میں شامل مختلف مذہبی و سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس میں امریکی سفارت خانہ منتقل کرنے کے اعلان پرسخت ردعمل دیتے ہوئے کہاہے کہ امریکی صدر کے اقدام سے پوری امت مسلمہ کے جذبات مجروح ہوئے ہیں، امریکی صدر کے اقدام سے تمام مسلمانوں کے دل زخمی ہوئے ہیں،ٹرمپ اسلام دشمنی میں پاگل ہو چکا ہے فیصلہ واپس نہ لیا تو سنگین نتائج بھگتنا ہونگے،امریکہ کے اس فیصلہ سے پورا مشرق وسطی جنگ کی لپیٹ میں آجائے گا۔ وہ جمعرات کوجماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کے مسئول شفیق الرحمان ،صدر انجمن تاجران اجمل بلوچ،ملی مسلم لیگ اسلام آباد کے رہنما زاہد مقبول ،سابقہ چیئرمین سی ڈی اے مزدور یونین چوہدری یٰسین ،پیر عظمت علی شاہ ودیگر نے اختجاجی مظاہرے سے خطاب کر رہے تھے ۔تفصیلات کے مطابق دفاع پاکستان کونسل اور جماعۃ الدعوۃ کی اپیل پر ملک بھر میںفلسطین کے حولے سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے متنازع اقدام پر ا حتجاجی مظاہرے کئے گئے،وفاقی دارلحکومت میںنیشنل پریس کلب کے باہر بڑا حتجاجی مظاہرہ کیاگیا۔جس میں دفاع پاکستان کونسل ،جماعۃ الدعوۃ ،ملی مسلم لیگ ،علماء و مشائخ اور تاجر و طلباء تنظیموں کے رہنمائوں نے شرکت کی۔اس موقع پر شرکاء کی جانب سے امریکہ کے خلاف اور فلسطین کی حمایت میں شدید نعرے بازی کی گی،مظاہرے میں اسکول و مدارس کے طلباء کی بھی کثیر تعداد موجود تھی جنہوں نے ہاتھوں میں کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر امریکی پالیسی نامنظور نامنظور،یہود و نصاری کا گٹھ جوڑ دنیا کے امن کے لیے خطرہ جیسی تحریریں درج تھیںجبکہ مظاہرے کے اختتام پر امریکی و اسرائیلی پرچم بھی نذر آتش کیئے گئے،جماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کے مسئول شفیق الرحمان نے کہا کہ بیت المقدس کوئی عام جگہ نہیں بلکہ یہ مسلمانوں کی محبتوں کا محور ہے،امریکی صدر کے متنازع فیصلے سے پوری امت مسلمہ کے دل زخمی ہوئے ہیں ،امریکہ و اسرئیل کا گٹھ جوڑ دنیا کے امن کے لئے خطرہ ہے۔