امریکی صدر کا اقدام اقوام متحدہ چارٹر کی سنگین خلاف ورزی ہے

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت)پاکستان بار کونسل کے وائس چیئرمین احسن بھون اور ایگزیکٹوکمیٹی کے چیئرمین حفیظ الرحمان چوہدری نے امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کا دارالخلافہ تسلیم کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر کا اقدام بین الاقوامی قانون اور اقوام متحدہ کے چارٹرکی سنگین خلاف ورزی کے علاوہ فلسطینی عوام کے آزاد ریاست کے حق کی بھی پامالی ہے کیونکہ یروشلم فلسطین کا دارحکومت ہے ،جس کے لیے کئی دہائیوں سے جد وجہد کء دوران انہوں نے قربانیاں دی ہیں ،اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل مجرمانہ غفلت کو چھوڑ کر ہنگامی اجلاس طلب کرے اور امریکی صدر کے فیصلے کے خلاف قرار دار منظور کرے ۔جمعرات کو پاکستان بار کونسل کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق پاکستان بارکونسل کے راہنمائوں نے امریکی صدر کے فیصلے پر شدید تشویش کا اظہا رکرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ پرسپر پاور ہونے کی حیثیت سے قانونی اور اخلاقی طور پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ فلسطین کے عوام کے آزاد ریاست کااحترام کرے اور انکے یروشلم کے فلسطینی دارالخلافہ کے قانونی مطالبے کی حمایت کرنی چاہیئے ،جو تاریخی طور پر مسلمانوں کا حق ہے۔