دفاع پاکستام کونسل کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت تسلیم کرنے کیخلاف مظاہرہ

راولپنڈی (نوائے وقت رپورٹ)دفاع پاکستام کونسل کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت تسلیم کرنے کیخلاف روالپنڈی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔مظاہرے کی قیادت جماعۃ الدعوۃ راولپنڈی کے مسئول مولانا عبدالرحمن نے کی ۔مظاہرے میں شرکاء نے ہاتھوں میں کتبے اور بینرز بھی اٹھا رکھے تھے جن پر قبلہ تحفظ اول ہمارا تھا رہے گا،امریکی اقدام نامنظور نامنظور،امریکی اقدام اور بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت تسلیم کرنا مسلمانوں کے دل پر حملہ ہے جیسی تحریریںدرج تھیں۔مظاہرے وکلائ،طلباء اور سول سوسائٹی سمیت دیگر طبقات سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی ۔مظاہرے سے جماعۃ الدعوۃ راولپنڈی کے مسئول مولانا عبدالرحمٰن،چئیرمین سول سوسائٹی راجہ ظفر اقبال ،جسٹس ڈیموکریٹڈ پارٹی پنجاب کے صدر ملک صالح ایڈووکیٹ،نعیم گل ممبر راولپنڈی بار کونسل ،المحمدیہ سٹوڈنٹس کے ضلعی ناظم احمر وقار ودیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلم امہ ٹرمپ کے اس فیصلے اور بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت تسلیم کرنے کی مذمت کرتی ہے،حکمرانو ں کے لئے اٹھ کھڑے ہونے کا کڑا وقت ہے،ٹرمپ امریکہ کے لئے گوربا چوف ثابت ہوگا ، ٹرمپ کا یہ اقدام صرف یہودیت کی دوستی اور اسلام و مسلمانوں کے خلاف ان کے خیالات کا مظہر ہے۔اسرائیل یروشلم کو اپنا دارالحکومت قرار دیتا ہے اور امریکہ اس کو تسلیم کرنے جارہا ہے۔ امریکہ کے اس فیصلہ سے پورا مشرق وسطی جنگ کی لپیٹ میں آجائے گا۔اپنے بیان میں انہوںنے کہاکہ اسرائیل نے بیت المقدس سمیت فلسطین پر زبردستی قبضہ کیا جس پر اقوام عالم خاموش تماشائی بنی رہی۔ مقبوضہ فلسطین میں مسلمانوں کا قبلہ اول ہے۔ امریکا کی جانب سے ایسے فیصلے پر عالم اسلام سے شدید ردعمل آئے گااور پوری دنیا کا امن متاثر ہوگا۔اگر بین الاقوامی دنیا یہ چاہتی ہے کہ امن و امان ہوتو مسلمانوں کیخلاف ایسے اقدامات سے گریز کرنا چاہئے۔امریکا کے اس اقدام کو روکنے کے لیے حکومت پاکستان اپنا بھرپور کردار ادا کرے۔مولانا عبدالرحمن نے کہا کہ آج جمعہ کے بعد مرکز القدس کے باہر تحفظ قبلہ اول کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا۔