اغواء برائے تاوان کیس، ملوث ملزم سمیع اللہ پر فرد جرم عائد، ملزم کا صحت جرم سے انکار

راولپنڈی(ٓنیوزرپورٹر)انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج سلیمان بیگ نے اغواء برائے تاوان کے مقدمے میں ملزم پر فرد جرم عائد کرتے ہوئے 5کیسزمیں گواہان کو طلب اور 2میں 2گواہان کے بیان قلمبند کرلئے ۔عدالت نے کالعدم تنظیم کے رہنماء کا 15 روزہ جسمانی ریمانڈ بھی دے دیا۔ جمعرات کو عدالت نے تھانہ سی ٹی ڈی میں درج مذہبی منافرت پھیلانے کے مقدمے میں ملوث ملزم فیض الرحمان کیس کی سماعت 12دسمبر، بارود برآمدگی کے 4مقدمات میں ملوث ملزمان مجیب الرحمان،وقاص، سمیع اور محمد مبین کے کیسز کی سماعت 12,11اور 21دسمبر تک ملتوی کر دی ۔3کیسزمیں گواہوں کو سمن جاری کئے گئے اور ایک کیس میں التواء منظور کرلیا گیا، عدالت نے تھانہ حسن ابدال میں درج پولیس مقابلے کے مقدمے میں ملوث ملزم شہزاد کیس میں 1گواہ کا بیان قلمبند کرکے سماعت 22دسمبر، تھانہ سٹی چکوال میں درج اغواء برائے تاوان کے مقدمے میں ملوث ملزم سمیع اللہ پر فرد جرم عائد کر دی ملزم نے صحت جرم سے انکار کر دیا عدالت نے سماعت 24دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے استغاثہ کی شہادتیں طلب کرلی ہیں، تھانہ پنڈی گھیب میں درج مذہبی منافرت پھیلانے کے مقدمے میں ملوث ملزم عابد کیس میں 1گواہ کا بیان قلمبند کرکے سماعت 21دسمبر جب کہ تھانہ آر اے بازار میں درج قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم وسیم آفتاب وغیر کیس میں 1گواہ کا بیان قلمبند کرکے سماعت 11دسمبر تک ملتوی کر دی ۔عدالت نے کالعدم تنظیم کے رہنماء کا 15 روزہ جسمانی ریمانڈ بھی دے دیاانسداد دہشت گردی فورس حکام نے عدالت کے روبرو ملزم حفیظ ولد محمد اسلم کو پیش کرتے ہوئے بتایا کہ اس کا تعلق ایک کالعدم تنظیم سے ہے جس سے چکری روڈ پر کارروائی کرتے ہوئے بارودی مواد ڈیٹو نیٹرسمیت دیگر مواد برآمد کر لیا جسے گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا ہے ، ملزم سے تفتیش کی استدعا ہے کہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے ملزم کا 15روز ہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا ۔