جمعیت علمائے اسلام (ف) کی مرکزی مجلس عاملہ کا اجلاس آج لاہور میں ہوگا

اسلام آباد(وقائع نگار خصوصی) جمعیت علما اسلام (ف) کی مر کزی مجلس عاملہ کا اجلاس آج (جمعہ ) مولانا فضل الرحمن کی صدارت میں ہوگا ، جس میں دینی اتحاد کے حوالے سے صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا، امریکی صدرٹرمپ کے یروشلم (مقبوضہ بیت المقدس) کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے خلاف دینی جماعتوں کے مشترکہ لائحہ عمل پر غورکیا جائے گا جمیعت علماء اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے دینی جماعتوں کے اتحاد میں شامل ہونے کی بجائے پاکستان تحریک انصاف سے انتخابی اتحاد کا باقاعدہ طور پر اعلان کردیا ہے جے یو آئی (ف) کی مر کزی مجلس عاملہ اس نئی صورت حال پر غور کیا جائے گا جے یو آئی (ف) نے واضح کیا ہے پاکستان کو سیکولر بنانے کی کسی سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔ دینی جماعتوں کا اتحاد جلد قائم ہونے والا ہے،قوم کی نظریں اب دیندار قیادت پر ہیں جو ملک کو بحرانوں کو سے آ زاد کراسکتی ہے اس امر کا اظہار جمعرات کوجے یو آئی (ف) کے مر کزی سیکرٹری جنرل مولانا عبد الغفور حیدری نے کیا ہے ۔ جاری بیان کے مطابق مرکزی مجلس عاملہ کااجلاس پارٹی کے مر کزی ہیڈ آفس جامعہ مدنیہ لاہور میں ہوگا ، جے یو آئی کے مر کزی سیکر ٹری جنرل سینیٹر مولانا عبد الغفور حیدری سمیت دیگر اراکین شریک ہونگے۔ امریکی صدرٹرمپ کے یروشلم (مقبوضہ بیت المقدس) کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے خلاف دینی جماعتوں کے مشترکہ احتجاج کی حکمت عملی کا اعلان متوقع ہے ۔ پارٹی ترجمان مولانا محمد امجد خان کے مطابق اجلاس میں ملکی اور اہم بین الاقوامی صورتحال اور متحد مجلس عمل کے حوالے سے اب تک ہونے والی پیش رفت پرغور اور اہم فیصلے کیے جائیں گے۔ آئندہ عام انتخابات کے حوالے سے جماعت کی حکمت عملی طے کی جائے گی۔