ضروری قانون سازی کے بعد حلقہ بندیاں عام انتخابات سے قبل مکمل ہوجائیں گی، سردار رضا

اسلام آباد(خصوصی نمائندہ)چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار محمد رضا نے کہا ہے کہ ضروری قانون سازی کے بعد حلقہ بندیوں کی حد بندی اگلے عام انتخابات سے قبل مکمل ہو جائیگی۔ یہاں ووٹرز کے قومی دن کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے نئی حد بندیاں مقررہ وقت پر مکمل کرنے کی غرض سے حکومت کی توجہ اس جانب مبذول کرائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی عمل میں مزید شفافیت لانے کیلئے الیکشن کمیشن اگلے انتخابات میںبیلیٹ پیپرز واٹر پیپر پر پرنٹ کریگا اور اس سلسلے میں تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں، اس کے علاوہ انتخابی عمل میں خواتین اور معذور افراد کی شرکت کو یقینی بنانے کیلئے بھی انتظامات کر لئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کمیشن نے انتخابی فہرستوں پر نظر ثانی کا کام بھی شروع کر دیا ہے تاکہ قومی شناختی کارڈ کے حامل تمام افراد کی رجسٹریشن کو بروقت یقینی بنایا جا سکے، نظر ثانی کے بعد اگلے انتخابات سے قبل ووٹرز کی تعداد ایک کروڑ سے تجاوز کر جائیگی۔ اس وقت الیکشن کمیشن نئے قانون کے تحت اگلے الیکشن کی تیاریوں میں مصروف ہے، تاہم ایک سال سے بھی کم عرصہ میں اس قانون پر عملدرآمد یقینا ایک چیلنج ہے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کو بین الاقوامی معیار کے مطابق کرانے کیلئے الیکشن کمیشن جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانے کیلئے کوشاں ہے۔اس سلسلے میں الیکشن کمیشن تقریبا ستر ہزار پولنگ سٹیشنز جیو گرافک انفارمیشن سسٹم (جی آئی ایس) کیساتھ منسلک کئے ہیں۔ اگلے انتخابات میں ووٹر نہ صرف اپنے ووٹ کی تفصیلات کو موبائل پر چیک کر سکیں گے بلکہ اپنے پولنگ سٹیشن کی عمارت کو بھی انٹر نیٹ پر دیکھا جا سکے گا۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے ووٹرز اور عوامی آگاہی کیلئے ’’کلک ای سی پی‘‘ کے نام سے نئی موبائل ایپ تیار کی ہے۔اس نئی ایپ پر انتخابی قوانین، رپورٹس، الیکٹورل ہینڈ بکس، ووٹر کے اعداد و شمار، ویڈیو پیغامات، انتخابی نتائج اور ادبی مواد دستیاب ہوگا۔