طاہر القادری کے بعد ق لیگی قیادت کے مالی معاملات کی بھی تحقیقات شروع

اسلام آباد (آئی این پی) وفاقی وزارت داخلہ کی ہدایت پر ایف آئی اے نے عوامی تحریک کے سربراہ علامہ طاہر القادری کے بعد انکے  دیگر اتحادیوں خاص طور پر (ق) لیگ کی قیادت  کے مالی معاملات کی بھی تحقیقات شروع کر دی ہے۔ ایف آئی اے اپنی تحقیقات میں معلوم کریگی کہ حکومت کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کیلئے  پاکستان عوامی تحریک اور اسکے اتحادیوں کو اندرون یا بیرو ن ملک سے کوئی فنڈز تو نہیں ملے۔ چوہدری پرویز الٰہی کے بنک اکاوئنٹس، ٹیکس ادائیگی اور اثاثوں کی چھان بین بھی شروع کردی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق مذکورہ دونوں رہنماؤں کے اثاثوں اور ٹیکس ادائیگی کا بھی جائزہ لیا جا رہا ہے تاکہ ضروت پڑنے پر انکے خلاف کارروائی کی جا سکے۔ ذرائع نے بتایا کہ چوہدری پرویز الٰہی کیخلاف تحقیقات کرانے کا فیصلہ پنجاب اور وفاق کی دو اہم شخصیات نے باہمی مشاورت سے کیا ہے۔ پرویز الٰہی کے خلاف شروع کی گئی تحقیقات کو انتہائی خفیہ رکھا جا رہا ہے اور ایف آئی اے  حکام پرویز الٰہی کے بنک اکاؤنٹس، ٹیکس ادائیگیوں اور اثاثوں کی چھان بین کے معاملے پر کسی قسم کا تبصرہ کرنے سے بھی گریزاں ہیں۔
تحقیقات/ ایف آئی اے