محکمہ جنگلات کیس کے حوالے سے بحریہ ٹائون کی پٹیشن

اسلام آباد (آن لائن) بحریہ ٹائون نے محکمہ جنگلات کیس کی سماعت سے جسٹس جواد ایس خواجہ کو الگ کرنے کے لئے سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کر دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بحریہ ٹائون اور ملک ریاض حسین عدالت کے اختیار کردہ عمل اور کارروائی سے رنجیدہ ہیں۔ پٹیشن جو وکیل اعتزاز احسن کی جانب سے دائر کی گئی اور سپریم کورٹ آفس نے اعتراضات کے ساتھ واپس کی میں کہا گیا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 4‘ 9 اور 25 سمیت قانون شہادت آرڈر کے آرٹیکل 9 کی خلاف ورزی کی گئی ہے، 25 مارچ اور 31 مارچ 2015ء کو بحریہ ٹائون کے خلاف مختلف احکامات جاری کئے۔ پٹیشن میں کہا گیا ہے کہ 31 مارچ 2015ء کو بھی عدالت نے بحریہ ٹائون کے فاضل وکیل کا عمومی التواء ماننے سے انکار کر دیا تھا۔ پٹیشن میں کہا گیا ہے کہ دفاع کرنا اور وکیل کے ذریعے نمائندگی ہر ایک کا بنیادی حق ہے جب چیف جسٹس عمومی التواء دیتے ہیں تو یہ بات قابل فہم ہے کہ کیس بغیر کسی سماعت کے ملتوی کر دیا جائے گا اور اس تاریخ کو کسی بھی قسم کے احکامات جاری نہیں کئے جائیں گے۔