مقبوضہ کشمیر: انتخابی ڈھونگ مسترد ، رائے شماری کرائی جائے : بین الاقوامی کشمیر کانفرنس

اسلام آباد(آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں ہونے والا حالیہ انتخابی ڈھونگ کو مسترد کرتے ہیں۔ یہ انتخابات اقوام متحدہ کی قراردادوں کا متبادل نہیں، مقبوضہ کشمیر میں فوری طور پر رائے شماری کرائی جائے، خطے سے بھارتی افواج کا انخلاء کرکے اقوام متحدہ کی نگرانی میں صاف، شفاف و غیر جانبدار الیکشن کرائے جائیں، ماورائے عدالت قتل و غیر قانونی گرفتاریاں بند کی جائیں۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان، آزاد کشمیر کی تمام جماعتوں پر مشتمل نمائندوں نے یہاں کشمیر امریکن کونسل کے زیر اہتمام ہونے والی بین الاقوامی کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا  جس کا موضوع کشمیر انتخابات کا مسئلہ ہے یا حق خود ارادیت کا، تھا۔ کانفرنس کے مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا واحد حل اقوام متحدہ کی قراردادیں ہیں اور کشمیریو ںکو حق خودارادیت کی ضمانت یہی قراردادیں فراہم کرتی ہیں ان کو من وعن تسلیم کرکے استصواب رائے کرایا جائے۔ مسئلے کے تینوں فریق پاکستان، بھارت اور کشمیریوں کو ان مذاکرات میں شامل کیا جائے۔ اصل فریق کشمیری عوام ہیں جن کا مستقبل دائو پر لگا ہوا ہے مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے حالیہ انتخابات کو فوری طور پر مسترد کیا گیا یہ آزادی اور حق خودارادیت کا نعم البدل نہیں۔ شرکاء نے مقبوضہ کشمیر میں آزادی صحافت پر قدغن لگانے کی بھی مذمت کی۔ اعلامئے میں کہا گیا کہ مقبوضہ کشمیر میں پابند سلاسل اسیری رہنمائوں کو فوری طورپر رہا کیا جائے۔ کانفرنس کے شرکاء نے اس بات پر افسوس کااظہار کیا  کہ سید علی گیلانی، شبیر احمد شاہ، آسیہ اندرابی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یٰسین ملک کو کانفرنس میں شریک ہونے کیلئے بھارت کی جانب سے سفری دستاویزات مہیا نہیں کی گئیں۔ کانفرنس میں مطالبہ کیا گیا کہ اقوام متحدہ فوری طور پر مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے۔ قبل ازیں کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر کمیٹی کے چیئرمین جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر ہمیشہ پاکستان نے کشمیریوں کے موقف کی حمایت کی اسٹیبلشمنٹ بیورو کریسی اور تمام سیاسی جماعتیں اس بات پر متفق ہیں کہ کشمیریوں کو حق خوداردیت ملنا چاہئے اور اس میں کوئی ابہام بھی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ نائن الیون نے کشمیر پر گہرے اثرات مرتب کئے ہیں دنیا بھر میں آزادی اور حق خوداردیت کی تحریکوں کو دہشت گردی سے جوڑنے کی کوشش کی جارہی ہے کشمیریوں کا اعتباد پاکستان پر کبھی غیر متزلزل نہیں ہوا مسئلہ کشمیر سے دستبردار ہونے کیلئے بین الاقوامی برادری کا پاکستان پر دبائو ہے کشمیریوں کی توقعات پر پورا اترنا پاکستان کے بس کی بات نہیں ہے ہمیں وقت کا انتظار کرنا ہوگا حکومت کو کشمیر کے حوالے سے اپنی پالیسی کو ازسرنو ترتیب دینا ہو گا۔ اگر بھارت نے دریائوں پر ڈیم بنا دیئے تو پاکستان بنجر ہوجائے گا کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے۔ کشمیر امریکن کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر امتیاز احمد خان نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے الیکشن فراڈ ہیں یہ شرمناک اقدام ہے کشمیریوں نے اسے مسترد کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف آف آرمی سٹاف کے بیان کے بعد کشمیریوں کے حوصلے بلند ہوگئے ہیں۔ کانفرنس سے حریت کانفرنس کے کنوینر سید یوسف نسیم، سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چودھری، جماعت اسلامی آزاد کشمیر کے امیر عبد الرشید ترابی، حریت کے کنوینئر غلام محمد صفی کے علاوہ دیگر سیاسی و مذہبی رہنمائوں نے بھی خطاب کیا جبکہ مقبوضہ کشمیر کے رہنماؤں کے پیغامات پڑھ کر سنائے گئے۔