سندھ ہائیکورٹ مشرف کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم نہیں دے سکتی ، قانونی و آئینی ماہرین

اسلام آباد (آن لائن) آئینی و قانونی ماہرین کے مطابق سندھ ہائیکورٹ پرویزمشرف کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم نہیں دے سکتی، بالفرض سندھ ہائیکورٹ پرویزمشرف کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کا حکم دے بھی دیتی ہے تو وہ ایک مخصوص کیس کے حد تک ہوگا، سندھ ہائیکورٹ کا فیصلہ اکبر بگٹی قتل کیس اور علامہ عبدالرشید غازی قتل کیس میں لاگو نہیں ہوگا، سندھ ہائیکورٹ کی طرف سے پرویزمشرف کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے کا فیصلہ آیا تو بھی اکبر بگٹی قتل کیس اور علامہ عبدالرشید غازی قتل کیس میں پرویزمشرف کا نام ای سی ایل میں بدستور موجود رہے گا، اس لئے کہ سندھ ہائیکورٹ کا فیصلہ ان کیسز کے متعلق ہوگا جو سندھ ہائیکورٹ یا سندھ کے کسی بھی حصے میں زیرسماعت ہوں، چونکہ پرویزمشرف کے خلاف اکبر بگٹی قتل کیس سبی کی عدالت میں اور علامہ عبدالرشید غازی قتل کیس اسلام آباد کی عدالت میں زیرسماعت ہیں اس لئے سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کے باوجود بھی ان دو کیسز میں پرویزمشرف کا نام ای سی ایل سے خارج نہیں ہوسکتا۔