اندرونی اور بیرونی چینلجوں سے نبٹنے کیلئے ایران پاکستان کیساتھ کھڑا ہے : احمد نژاد

تہران / اسلام آباد (آن لائن) ایرانی صدر محمود احمدی نژاد نے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کے کردار کو سراہتے ہوتے کہا کہ ایران داخلی و خارجی چیلنجوں کے مقابلے کےلئے پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے۔ دونوں ممالک کے مابین برادرانہ تعلقات پر کوئی تیسرا ملک اثر انداز نہیں ہوسکتا۔ گیس پائپ لائن منصوبے پر جلد کام شروع کرنا چاہتے ہیں جس سے دونوں ممالک کے درمیان معاشی تعاون میں بہتری آئےگی۔ ان خیالات کا اظہار ایرانی صدر نے سپیکر قومی اسمبلی ڈاکٹر فہمیدہ مرزا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے دس رکنی پارلیمانی وفد کے ہمراہ ان سے ملاقات کی۔ قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے ترجمان سے جاری تفصیلات کے مطابق ملاقات میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ ایران پاکستان کے ساتھ اچھے ہمسائیوں کے تعلقات رکھتا ہے اور کوئی تیسرا ملک یا دہشت گردی کا کوئی بھی واقعہ ہمارے تعلقات میں دراڑ نہیں ڈال سکتا۔ انسداد دہشت گردی کےلئے کی جانےوالی کوششوں میں ایران‘ پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے۔ ہم چاہتے ہیں ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے پر جلد اور تیزی سے عملدرآمد ہو تا کہ پاکستان کی توانائی کی ضروریات پوری ہو سکے۔ ایران پاکستان کے صوبے بلوچستان کو بجلی فراہم کرےگا اور اس سلسلے میں متعلقہ پاکستانی حکام کےساتھ تمام طریقہ کار کو حتمی شکل دے چکی ہے۔ سپیکر قومی اسمبلی فہمیدہ مرزا نے کہا کہ ہم ایران کے ساتھ اپنے برادرانہ تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتے ہیں اور ان کے اس دورے سے پارلیمانی سمیت تمام شعبوں میں روابط مزید مستحکم ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی ایرانی حکام سے مثبت، تعمیری اور مفید ملاقاتیں ہوئیں ہیں اور دونوں ملک ایک دوسرے کے امن، خوشحالی اور استحکام کےلئے ملکر کام کریں گے۔
احمدی نژاد